پشاور میں 3دھماکے، 3 افراد زخمی، میرانشاہ: کرفیو کی خلاف ورزی پر فائرنگ

21 اکتوبر 2012

میرانشاہ / پشاور (آئی این پی+ آن لائن) شمالی وزیرستان کے صدر مقام میران شاہ میں کرفیو کی خلاف ورزی پر فائرنگ سے ایک شخص زخمی ہو گیا جبکہ سکیورٹی فورسز کی جانب سے رات بھر بازار میں مشکوک ٹھکانوں پر مارٹر گولے فائر کئے جانے سے متعدد بچے اور خواتین زخمی ہو گئے۔ دوسری جانب ماچس کیمپ اور خروانی کیمپ سے سینکڑوں خاندان نقل مکانی کر گئے۔ کرفیو کی وجہ سے تمام سرکاری دفاتر، تعلیمی اداروں اور میران شاہ بازار مکمل طور پر بند ہیں جس کے باعث قبائلی عوام کو سخت مشکلات کا سامنا ہے۔ ہفتہ سکیورٹی ذرائع کے مطابق شمالی وزیرستان میں دوسرے روز بھی کرفیو نافذ رہا سکیورٹی فورسز کی جانب سے رات بھر ماچس کیمپ، خروانی علاقوں کے علاوہ میران شاہ بازار میں بھی مشکوک پر مارٹر گولے فائر کئے گئے جبکہ کرفیو کے باعث عوام کو سخت مشکلات کا سامنا ہے۔ مزید براں پشاور کے نواحی علاقہ باڑہ شیخان میں دو دھماکے ہوئے۔ پولیس کے مطابق شدت پسندوں نے بارودی باڑہ شیخان میں فرنٹیئر روڈ پر دو مختلف مقامات پر نصب کئے۔ جو ہفتہ کی صبح سویرے ریموٹ کنٹرول سے تباہ کئے گئے۔ دھماکوں کی آواز دور دور تک سنی گئی، جس سے علاقہ میں خوف وہراس پھیل گیا۔ پولیس کے مطابق شدت پسندوں کا نشانہ پولیس کی گشتی ٹیمیں تھیں تاہم دھماکوں میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ ادھر پشاور میں کوہاٹ روڈ پر سکیم چوک میں سی ڈیز کی دکان میں دھماکے سے تین افراد زخمی ہو گئے۔ پولس کے مطابق دھماکے سے سی ڈیز کی دکان تباہ ہو گئی جبکہ قریبی چار دکانوں کو بھی نقصان پہنچا۔