پاکستان بھارت ایٹمی طاقتیں ہیں، ڈیڑھ ارب انسان جنگ کے متحمل نہیں ہو سکتے: گورنر

21 اکتوبر 2012


لاہور (آئی اےن پی) گورنر پنجاب کھوسہ نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت دونوں ایٹمی طاقتیں ہیں‘دونوں ممالک کے ڈیڑھ ارب انسان جنگ کے متحمل نہیں ہو سکتے اور اس حوالے سے وکلاءپاک بھارت دوستی کے رشتے کو مضبوط کرنے میں دونوں حکومتوں کے ویژن کو تبدیل کر سکتے ہیں‘ انڈیا اور پاکستان کو لڑائی جھگڑے میں وقت ضائع کرنے کی بجائے عوام کی فلاح و بہبود اور انہیں غربت کی دلدل سے نکالنے کے لئے صَرف کرنا ہوگا‘ جنگ کی بجائے اَمن کی فضاءکے لئے کام کرنا ہوگا کیونکہ جنگ کسی بھی مسئلے کا حل نہیں ۔ہم اچھے ہمسائے ہیں اور ہمیں پیار محبت اور بھائی چارے سے رہنا چاہئے‘کشمیر کا مسئلہ ہو یا ڈیم / پانی کی تقسیم، ہمیںان مسائل کو بین الاقوامی فورم کی بجائے مذاکرات کی میز پر مل بیٹھ کر حل کرنا ہو گا‘ بلاشبہ کشمیر کا ایشو بہت اہم ہے اور ہم چاہتے ہیں کہ اس کا حل اقوام متحدہ کی 1948ءکی قرادادوں کے مطابق ہونا چاہئے۔ سیاچن میں فوجیں رکھنا بے وقوفی ہے علاقے کو غیر فوجی حصہ قرار دیا جائے۔ پاکستان اور بھارت پڑوسی ہیں اور ہمیشہ رہیں گے دونوں ملک جوہری طاقتیں ہیں کوئی چھوٹا بڑا نہیں ۔ وہ بھارتی سپریم کورٹ بار کونسل کے وفد کے اعزاز میں عشائیہ سے خطاب کر رہے تھے۔ گورنر پنجاب نے کہا کہ وکلا معاشرے کا اہم طبقہ ہے اور انصاف کے حصول کے لئے وکلا انتہائی اہم کردار ادا کرسکتے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ وکلاءہمیشہ انصاف ہی کی جنگ لڑتے ہیں اور دونوں ممالک کی پارلیمنٹ میں بھی وکلا کی کثیر تعدار موجود ہے۔ دونوں ممالک کی حکومتوں کو اب اپنے اپنے عوام کی رائے کو تسلیم کرنا ہو گا۔ اُنہوں نے کہا کہ ہم ایک ہی ثقافت اور کلچر سے تعلق رکھتے ہیں حتیٰ کہ ہمارے بزرگوں کی قبریں اور مزارات بھی ایک دوسرے کے ممالک میں ہیں، اس لئے ہمیں باہمی محبت کے جذبے کو آگے لے کر جانا ہو گا۔ ہریانہ چندی گڑھ ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر سردار گلبیر سنگھ نے حکومت پاکستان ، صدر، وزیراعظم پاکستان اور گورنر پنجاب کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک اب وسیع النظر اور وسیع القلبی کے ساتھ ایک دوسرے کے قریب ہو رہے ہیں۔