وزیراعظم رینٹل پلانٹس سے لئے جانیوالے کمشن کا قوم کو حساب دیں: مشاہد اللہ

21 اکتوبر 2012


لاہور (خصوصی رپورٹر) مسلم لیگ (ن) کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا ہے کہ جس ےونس حبیب کے الزامات کی پیپلزپارٹی مسلم لیگ (ن) کی قیادت کےخلاف پروپیگنڈہ کررہی ہے اس نے آصف زرداری اور بے نظیر پر بھی 50ملین روپے لینے کا الزام عائد کیا ہے۔ پیرصابر شاہ کی حکومت گرانے کےلئے 110ملین کی خطیر رقم پیپلزپارٹی نے لگائی اس کی بھی تحقیقات کی جائیں اور بتایا جائے کہ کن اختیارات کے تحت نوازشریف کےخلاف 1993ءکے عام انتخابات میں مذہبی قوتوں میں کروڑوں روپے محض پاکستان مسلم لیگ (ن) کے ووٹ کاٹنے کی خاطر دیئے۔ مشاہد اللہ خان نے کہا پیپلزپارٹی کی قیادت نے نوازشریف کی حکومت گرانے کی خاطرلانگ مارچ پر 250ملین کی جو رقم خرچ کی اُسے فوری قومی خزانے میں جمع کروائے۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہارایک وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ مشاہد اللہ خان نے کہاکہ پرویزاشرف کا قوم سے خطاب چور مچائے شورکے مترادف تھا، پرویزاشرف پہلے رینٹل پاور پلانٹس سے حاصل کمشن کی رقم کا قوم کو حساب دیں اور اپنے آپ کو محاسبے کیلئے پیش کریں۔ مسلم لیگ (ن) آج بھی دعوت دیتی ہے کہ ماضی میں لگائے جانے الزامات کی بلا تفریق اور شفاف تحقیقات کےلئے ٹرتھ اینڈ ری کنسولیشن کمیشن قائم کیا جائے۔ مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما سینیٹر طارق عظیم نے کہا ہے کہ اصغر خان کیس کا فیصلے آنے کے بعد پیپلز پارٹی آپے سے باہر ہو گئی ہے اور اس نے بلاوجہ اپنی توپوں کا رُخ مسلم لیگ (ن) اور اسکی قیادت کی جانب کر لیا۔ ماڈل ٹاو¿ن میں اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی زیادہ خوش نہ ہوکیونکہ مہران بینک کے سابق صدر یونس حبیب سے اصل فوائد سمیٹنے والی پیپلز پارٹی اور اس کی قیادت ہی ہے۔1994ءمیں ایک انٹرویو میں یونس حبیب نے تسلیم کیا تھا کہ انہوں نے بینظیر بھٹو اور آصف زرداری کو پانچ کروڑ روپے دیئے تھے جس کی دستاویزات رحمن ملک کے پاس ہیں۔