ملالہ پر حملہ ڈرامہ اور مسلمانوں کے خلاف صلیبی سازش کا حصہ ہے: القاعدہ

21 اکتوبر 2012

اسلام آباد (آن لائن) القاعدہ سے منسلک ویب سائٹ نے ملالہ یوسف زئی پر حملے کو محض ڈرامہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے یہ مسلمانوں کیخلاف عالمی صلیبی سازش کا حصہ ہے۔ غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق انصار اللہ نامی ویب سائٹ پر کہا گیا ہے القاعدہ لڑکیوں کی تعلیم کیخلاف نہیں بلکہ سیکولر نظام تعلیم کیخلاف ہے۔ ویب سائٹ پر جاری بیان میں پاکستانی اور عالمی میڈیا کو بھی ملالہ کی بھرپور کوریج پر تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے ویب سائٹ کے مطابق تحریک طالبان پاکستان کے کسی مجاز شخص کی جانب سے تصدیقی بیان کی عدم موجودگی میں سارا معاملہ مشکوک ہو جاتا ہے۔ احسان اللہ احسان کو تحریک طالبان کا ترجمان تسلیم کر کے ملالہ پر حملہ کی ذمہ داری سے متعلق کوئی بیان جاری نہیں کیا گیا۔ ویب سائٹ کے مطابق سوات آپریشن کے دوران ایک یہودی فلمساز ایڈم بی ایلک ملالہ کے گھر قیام پذیر رہا۔ ویب سائٹ پر مزید کہا گیا ہے ملالہ اور اس کا باپ امریکی سفارتکار اور امریکی وزیر خارجہ اور فوجی افسروں سے بھی ملے اور انہیں علاقہ کو طالبان سے پاک کرنے کی ترغیب دی بیان کے مطابق ملالہ پر حملے کیخلاف ردعمل فطری ہے تاہم حملے کے پیچھے خفیہ ہاتھ کارفرما ہیں۔