ملالہ روبہ صحت لیکن خطرے سے باہر نہیں : ڈاکٹر برمنگھم ہسپتال

21 اکتوبر 2012

برمنگھم (نوائے وقت نیوز/ بی بی سی ڈاٹ کام) برمنگھم میں کوئین الزبتھ ہسپتال کا کہنا ہے ملالہ روبہ صحت ہیں لیکن خطرے سے باہر نہیں ۔ کوئین البزتھ ہسپتال کے ڈاکٹر ڈیو راسر کا کہنا ہے طالبان کی گولی کا نشانہ بننے والی ملالہ کو مکمل بحالی کے آپریشن سے پہلے طویل آرام کی ضرورت ہے۔ گذشتہ روز ایک بیان میں ہسپتال نے کہا ملالہ کی حالت جمعہ جیسی ہی ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے ملالہ کی طبیعت مستحکم اور سنبھلی ہوئی ہے۔ کوئین الزبتھ ہسپتال کے مطابق ملالہ 9 اکتوبر کو سر میں گولی لگنے سے زخمی ہو گئی تھیں اور اب وہ علاج کے بعد پہلی مرتبہ لکھ کر بات کرنے اور سہارے سے کھڑے ہونے کے قابل ہو گئی ہیں۔ ملالہ کی صحت کے بارے میں پاکستان بھر اور پاکستان کے باہر بیرون ملک بسنے والے پاکستان میں شدید تشویش پائی جاتی ہے جس کا اندازہ سوشل میڈیا اور ذرائع ابلاغ میں شائع ہونے والی خبروں سے بخوبی کیا جا سکتا ہے۔ برمنگھم میں بسنے والے پاکستانیوں میں بھی ملالہ کے بارے میں تشویش پائی جاتی ہے اور بہت سے پاکستانی ملالہ سے یکجہتی کے اظہار کے لئے ہسپتال کی طرف سے خصوصی طور پر تیار کی گئی ویب سائٹ پر پیغامات لکھتے رہتے ہیں۔ نوائے وقت نیوز کے مطابق ملالہ یوسف زئی کی صحت بتدریج بہتر ہورہی ہے۔ سانس کی نالی میں لگی ٹیوب ہٹائے جانے کے بعد وہ بات کرنے کے قابل ہو جائیں گی۔ترجمان کوئین الزبتھ ہسپتال کے مطابق ملالہ کی حالت تسلی بخش ہے۔ گزشتہ روز ملالہ کی تصویر ان کی رضا مندی سے جاری کی گئی۔ ملالہ نیک تمناﺅں کے پیغامات بھیجنے والوں کا شکریہ ادا کرنا چاہتی ہیں۔ امریکی ٹی وی نے بھی اپنی ویب سائٹ پر ملالہ کیلئے خصوصی پیج مختص کردیا۔پیج پر ملالہ کی صحت کے بارے مےں صبح و شام معلومات فراہم کی جارہی ہیں۔