گیلانی نواز ٹیلی فونک رابطہ‘ کل ملاقات ہو گی

21 مارچ 2009
اسلام آباد ( وقائع نگار خصوصی + نمائندہ خصوصی) صدر آصف علی زرداری کو اعتماد میں لینے کے بعد وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد محمد نوازشریف کے درمیان فون پر رابطہ ہوا ہے‘ نوازشریف نے وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی کو جاتی عمرہ رائیونڈ میں اتوار کو ظہرانے پر مدعو کیا‘ اس موقع پر پارٹی کے صدر میاں شہباز شریف اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف چودھری نثار علی خان بھی موجود ہوں گے‘ وزیراعظم نے یہ دعوت قبول کر لی ہے۔ ذرائع کے مطابق چودھری نثار علی خان لاہور سے اسلام آباد کے لئے روانہ ہوئے لیکن میاں نوازشریف نے چودھری نثار علی خان کو راستے سے لاہور واپس بلا لیا گیا۔ چودھری نثار علی خان گذشتہ 4 روز سے لاہور میں ہی شریف برادران سے مشاورت اور ملاقاتیں کر رہے ہیں‘ ذرائع کے مطابق وزیراعظم کی شریف برادران سے ملاقات کے دوران قومی ایشوز پر اہم ’’بریک تھرو‘‘ کا امکان ہے‘ چودھری نثار علی خان اور وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی گذشتہ 4,3 روز سے رابطے میں تھے‘ وزیراعظم اتوار اور پیر کی درمیانی شب سے دوبارہ میاں نوازشریف سے فون پر بات چیت کر چکے ہیں‘ جمعہ کو وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے صدر آصف علی زرداری سے ملاقات کی اور انہیں نوازشریف سے رابطے کے بارے میں اعتماد میں لیا‘ پنجاب سے تعلق رکھنے والے 3 وفاقی وزراء نذر محمد گوندل‘ میاں منظور وٹو اور راجہ پرویز اشرف نے بھی وزیراعظم سے ملاقات کی‘ ذرائع کے مطابق وزیراعظم گیلانی میاں نوازشریف کے سامنے پنجاب میں مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی پر مشتمل مخلوط حکومت بنانے کی تجویز پیش کریں گے‘ وہ میاں نوازشریف کے لئے مفاہمت کا پیغام لے کر جائیں گے وزیراعظم اور نوازشریف نے میثاق جمہوریت پر عملدرآمد کے لئے باہمی تعاون پر اتفاق کیا ہے‘ وزیراعظم شریف برادران کو میثاق جمہوریت پر عملدرآمد کی صورت میں دوبارہ وفاقی حکومت میں شرکت کی دعوت دیں گے۔ دوسری طرف (ق) لیگ کے ذرائع کے مطابق شہباز شریف نے چودھری شجاعت حسین کو رائیونڈ میں ملاقات کے لئے مدعو کیا تھا تاہم بعد میں انہوں نے ذاتی مصروفیات کی بنا پر اس سے معذرت کر لی۔