مسلم لیگ نون کے رہنما جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ بھٹوسے بڑاکوئی لیڈر نہیں، شریف برادران آمریت کا ساتھ دینے اور دس سال ملک سے باہررہنے پرقوم سے معافی مانگیں ۔

21 اپریل 2011 (09:09)
قومی اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ نون کے سینیئر رہنما جاوید ہاشمی نے کہا کہ شریف برادران نے پہلے آمریت کا ساتھ دیا اور پھر قوم کو اکیلا چھوڑ کر ملک سے بھاگ گئے وہ اپنے اس فعل پر قوم سے معافی مانگیں جبکہ آمریت کا ساتھ دینے والے صدر آصف علی زرداری، اے این پی کے سربراہ اسفند یارولی، تحریک انصاف کے قائد عمران خان اور تمام دیگر افراد قوم سے معافی مانگیں ۔
جاوید ہاشمی نے کہا کہ انہیں پرویزمشرف سے حلف اٹھانے کا کہا گیا تھا تاہم انہوں نے انکار کردیا کیونکہ وہ سر تو کٹوا سکتے ہیں کسی آمر کے ہاتھوں حلف نہیں اٹھا سکتے۔ انہوں نے واضح کیا کہ جمہوریت اورآمریت ایک ساتھ نہیں چل سکتیں۔ مسلم لیگ نون کے رہنما کا کہنا تھا کہ وہ ضیاءالحق کی کابینہ میں شامل ہونے پر قوم سے معافی مانگتے ہیں۔
جاوید ہاشمی کا کہنا تھا کہ ذوالفقارعلی بھٹو اور بے نظیربھٹو سے بڑا کوئی لیڈر نہیں، وہ دونوں کو شہید سمجھتے ہیں۔ ملک میں نئے صوبوں کے قیام کی حمایت کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ نئے صوبے نہ بنائے گئے تو چھوٹے صوبوں کا احساس محرومی بڑھے گا۔ پنجاب حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے جاوید ہاشمی کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ نون کو پاکستان سے زیادہ پنجاب عزیز ہے، دس ارب روپے اگر صرف رائے ونڈ پرخرچ کئے جائیں گے تو باقی صوبے کا کیا بنے گا۔ انہوں نے ملک کو کرپشن سے پاک کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔