لاہورہائیکورٹ کے فل بینچ نے وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک صدارتی معافی کیس میں نیب سے متعلقہ ریفرنسز کا ریکارڈ طلب کرلیا ۔

21 اپریل 2011 (04:41)
لاہورہائی کورٹ چیف جسٹس اعجازاحمد چوہدری کی سربراہی میں قائم تین رکنی فل بینچ رحمان ملک صدارتی معافی کے خلاف دائردرخواست کی سماعت کی ۔ دوران سماعت درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ رحمان ملک نے معافی نہیں مانگی تھی اس باوجودصدر نے وزیراعظم کی ایڈوائس پر انہیں معاف کردیا۔ درخواست گزارکے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ رحمن ملک کو دی جانے والی معافی غیر قانونی ہے جس پرعدالت عالیہ نے نیب سے وزیر داخلہ کے خلاف نیب ریفرنسز کا ریکارڈ طلب کر لیا، کیس کی مزید سماعت اٹھائیس اپریل کو ہوگی۔