سپریم کورٹ کی جانب سے مختلف جماعتوں کے گیارہ ارکان پارلیمنٹ کو نااہل قراردیاگیا ہے، اس فیصلے کے بعد اسمبلیوں کی صورتحال

20 ستمبر 2012 (20:36)
سپریم کورٹ کی جانب سے مختلف جماعتوں کے گیارہ ارکان پارلیمنٹ کو نااہل قراردیاگیا ہے، اس فیصلے کے بعد اسمبلیوں کی صورتحال

سپریم کورٹ نے اپنے فیصلے میں تین خواتین سمیت گیارہ ارکان کونااہل قراردیا جن میں حکومتی جماعت پیپلز پارٹی کے چار، مسلم لیگ نون کے پانچ اور ایم کیوایم کے دو ارکان شامل ہیں۔
ان ارکین میں سے چارکا تعلق قومی اسمبلی سے ، پانچ ارکان پنجاب اسمبلی سے جبکہ دو ارکان کا تعلق سندھ اسمبلی
سے ہے۔ قومی اسمبلی سے نااہل ہونے والے اراکین میں سے فرح نازاصفہانی اور زاہد اقبال کا تعلق پیپلزپارٹی سے ، جمیل ملک مسلم لیگ نون اور فرحت محمود متحدہ قومی موومنٹ کے ٹکٹ سے قومی اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے تھے۔ پنجاب اسمبلی میں پانچ اراکین نااہل قرارپائے، جن میں ندیم خالد، وسیم قادر، اشرف چوہان اور محمد اخلاق کا تعلق مسلم لیگ نون سے ہے جبکہ آمنہ بٹر پنجاب اسمبلی میں پیپلزپارٹی کے ٹکٹ پرمنتخب ہوئی تھیں۔
سندھ اسمبلی کے نااہل ہونے والے اراکین میں نادیہ گبول کا تعلق ایم کیوایم اوراحمد علی شاہ پیپلزپارٹی کے رکن تھے۔ گیارہ اراکین کی نااہلی کے بعد قومی اسمبلی میں پیپلزپارٹی کی نشستوں کی تعداد ایک سو بائیس رہ گئی ہے، مسلم لیگ نون کی نوے اور متحدہ قومی موومنٹ کی چوبیس سیٹیں رہ گئیں۔ پنجاب اسمبلی میں مسلم لیگ نون کے چار ارکان کی نااہلی کے بعد ان کی نشستوں کی تعداد ایک سواڑسٹھ، جبکہ پیپلز پارٹی کی پنجاب اسمبلی میں نشستوں کی تعداد ایک سو پانچ ہوگئی ہے۔ دوسری جانب سندھ اسمبلی میں پیپلزپارٹی کی اکانوے جبکہ ایم کیوایم کی نشستوں کی تعداد پچاس رہ گئی۔