پشاور : ریموٹ کنٹرول بم دھماکے میں پاک فضائیہ کی وین ‘ مسافر کوچ تباہ ‘10 جاں بحق ‘30 زخمی

20 ستمبر 2012
پشاور : ریموٹ کنٹرول بم دھماکے میں پاک فضائیہ کی وین ‘ مسافر کوچ تباہ ‘10 جاں بحق ‘30 زخمی

پشاور (بیورو رپورٹ) پشاور کے نواحی علاقہ بڈھ بیر سکیم چو ک کے قریب پاک فضائیہ کی گاڑی پر ریمورٹ کنٹرول کار بم حملہ کے نتیجہ میں خاتون سمیت 10 افراد جاں بحق جبکہ پی اے ایف کے تین اہلکاروں،چار بچوں اور خواتین سمیت 30 افراد زخمی ہو گئے دھماکہ کے بعد لیڈی ریڈنگ میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی اور مقامی لوگوں اور امدادی ٹیموں نے زخمیوں کو طبی امداد دینے لئے ہسپتال منتقل کیا جہاں تین زخمیوں کی حالت نازک بتائی جاتی ہے۔ دھماکہ میں زخمی ہونے والے تینوں اہلکاروں کو سی ایم ایچ منتقل کیا گیا۔ دھماکہ سے پی اے ایف کی گاڑی اور ایک مسافر کوچ سمیت متعدد گاڑیاں اور دکانیں مکمل طور تباہ ہو گئیں بم ڈسپوزل یونٹ کے اہلکاروں نے جائے وقوعہ سے دھماکہ میں استعمال ہو نے والی گاڑی کا انجن اور دیگر پرزے اپنے قبضہ میں لے لئے دھماکہ کے بعد پولیس اور سکیورٹی فورسز نے علاقے کا محاصرہ کر کے مشتبہ افراد کے خلاف سرچ آپریشن کیا، تفصیلات کے مطابق بدھ کے روز پاک فضائیہ کی گاڑی نواحی علاقہ بڈھ بیر تھانہ کی حدود میں کوہاٹ روڈ سکےم چوک سے گزر رہی تھی کہ سڑک کے کنارے کھڑی بارود سے بھری ایک کار میں زور دار دھماکہ ہوا جس کے نتیجہ میں پاک فضائیہ کی گاڑی سمیت متعدد گاڑیوں کو نقصان پہنچا جبکہ ان گاڑیوں میں سوار ایک خاتون سمیت 8افراد جاں بحق ہوگئے بم ڈسپوزل یونٹ کے اسسٹنٹ انسپکٹر جنرل شفقت ملک نے نوائے وقت کو بتایا کہ دھماکہ کا نشانہ پاک فضائیہ کی گاڑی تھی جس میں سویلین اہلکارسوارتھے۔ شفقت ملک کے مطابق دھماکہ ریمورٹ کنٹرول تھا جس میں40 سے 50کلوگرام تک دھماکہ خیز مواد اور آرٹلری شیل استعمال کیاگیا ہے۔ کار کا انجن اور دیگر پرزے مل گئے ہیں انجن نمبر صاف نظر نہیں آرہا۔ صدر، وزیراعظم، نواز شریف، شہبازشریف، وزیراعلی خیبر پی کے امیر حیدر ہوتی، چودھری شجاعت حسین، چودھری پرویز الہی، الطاف حسین، اسفند یار ولی اور دیگر سیاسی رہنماﺅں نے بم دھماکے کی شدید مذمت اور جاں بحق افراد کے لواحقین سے دلی ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔ وزیر داخلہ رحمن ملک نے آئی جی خیبر پی کے سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ پشاور میں بم ڈسپوزل یونٹ نے ڈبہ بم برآمد کر کے اس کو ناکارہ بنا دیا ہے۔ پولیس کے مطابق مشکوک ڈبہ پشاور میں جمرود روڈ پر کسٹمز ہاوس کے قریب زیر تعمیر پل کی ریت اور بجری میں چھپایا گیا تھا۔ جسے مقامی لوگوں کی نشاندہی پر بم ڈسپوزل یونٹ نے ناکارہ بنا دیا۔