پراپیگنڈا مسترد، شہباز شریف کا دورہ خوشحالی لائے گا، چین: تعلقات میں کمی کا کہنے والے احمق، پاکستان

اسلام آباد (نوائے وقت رپورٹ) ترجمان چینی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ پاک چین تعلقات کے بارے میں غلط پروپیگنڈا کیا گیا، وزیراعظم شہباز شریف کا دورہ چین ایک سنگ میل اور کامیاب ہے۔ترجمان چینی وزارت خارجہ  نے رابطہ کرنے پر سوشل میڈیا پر منفی پراپیگنڈے پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم شہباز شریف کا دورہ چین ایک سنگ میل اور کامیاب ہے جو دونوں ممالک میں خوشحالی لائے گا۔ترجمان چینی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ وزیراعظم شہبازشریف کے اس دورے نے بہت سی راہیں پیدا کی ہیں جس سے لوگوں کو فائدہ ہوگا۔ترجمان چینی وزارتِ خارجہ نے کہا کہ وزیراعظم شہباز شریف نے چینی صدر شی جن پنگ سے بھی ملاقات کی جو دونوں ملکوں کے درمیان مضبوط تعلقات کی علامت ہے۔  علاوہ ازیں وفاقی وزیرمنصوبہ بندی احسن اقبال نے کہا ہے کہ حالیہ دورے کے بعد چین کے ساتھ تعلقات مزید بڑھے ہیں اور چینی صدر نے کہا ہم اسٹریٹیجک تعلقات کو مزید گہرا کرنا چاہتے ہیں لیکن ایک سیاسی جماعت چندروز سے پاک چین تعلقات پر پروپیگنڈا کررہی ہے۔لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے احسن اقبال کا کہنا تھاکہ مخالفین کو دباؤ میں لانے کیلئے ٹرولنگ شروع کی جاتی ہے، تنقید کرنے والوں کو ٹرولنگ کے ذریعے ہراساں کیا جاتا ہے، حکومت اور اپوزیشن میں رہے لیکن کبھی ریاستی اداروں کو تنقیدکا نشانہ نہیں بنایا، اداروں کوکمزور کریں گے تو ریاست کی بقاء کیلئے باہر سے کوئی ضمانت نہیں لا سکتے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور چین کے تعلقات پر ٹرولنگ شروع کردی گئی ہے، تاثر دینے کی کوشش کی جارہی ہے کہ خدانخواستہ پاکستان اورچین کے تعلقات میں کمی آگئی ہے، پہلی دفعہ اسپیس کے شعبے میں پاکستان اور چین کے تعلقات آگے لے جا رہے ہیں۔ان کا کہنا تھاکہ چین کے اشتراک سے اسپیس پروگرام کو آگے بڑھائیں گے، چین نے کہا ہے وہ اپ گریڈیڈ لیول پر سی پیک کو آگے بڑھانے کیلئے تیار ہے، چین سے روابط کو اسپیس کے شعبے میں بھی وسعت دی گئی ۔ پاک چین تعلقات کے حوالے سے وفاقی وزیر کا کہنا تھاکہ مشترکہ بیان سننے کے بعد کوئی احمق ہی ہوگا جوکہے تعلق کم ہورہاہے، حالیہ دورے کے بعد چین کے ساتھ تعلقات مزید بڑھے ہیں، چینی صدر نے کہا ہم اسٹریٹیجک تعلقات کو مزید گہرا کرنا چاہتے ہیں۔ یہ کہنا دشمن کا پروپیگنڈا ہے کہ چین نے تعلقات کو ڈاؤن گریڈ کردیا، یہ جماعت چین سے متعلق مخصوص ایجنڈا اپنائے ہوئے ہے، یہ لوگ چین سے تعلقات خراب ہونے کا تاثر دے رہے ہیں لیکن چین سے ہمارا تعاون ہمالیہ سے بھی بلند ہو چکا ہے۔احسن اقبال کا کہناتھاکہ پی ٹی آئی سمیت کسی کو بھی انتشار پھیلانے کی اجازت نہیں دیں گے، ایک سیاسی جماعت پاک چین تعلقات خراب کرنے میں ٹرول گردی کر رہی ہے، ان لوگوں کیخلاف سخت کارروائی جلد دکھائی دے گی۔ان کا کہنا ہے کہ کسی زید بکر کے آرٹیکل سے ریاست کی پالیسی ظاہرنہیں ہوتی، دنیا بھر میں آرٹیکل لکھے اور لکھوائے جاتے ہیں، کوئی بھی ملک اور ریاست آرٹیکلز کے مطابق پالیسی نہیں بناتی، پالیسی کے فیصلے حکومتوں کے درمیان طے پاتے ہیں۔وفاقی وزیر نے کہاکہ آپس کے اختلافات ہوسکتے ہیں، اس کا مطلب یہ کہ ریاست کے مفاد کیساتھ کھیلیں؟ ریاست کے مفادات کے ساتھ کھیلیں گے تو آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائیگا، ہمارا فرض ہے پاکستانی ریاست کے مفادات کا دفاع کریں۔ان کا مزید کہنا تھاکہ چین کی سب سے بڑی ٹیلی کمیونیکیشن کمپنی نے سالانہ 3 لاکھ پاکستانیوں کو تربیت دینے کا وعدہ کیا ہے، نوجوانوں کو نفرت سے پاک کرکے بہترین تربیت دینی ہے۔

ای پیپر دی نیشن