اقوام متحدہ مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے ذمہ داریاں پوری نہیں کررہی : صدر آزاد کشمیر

19 اکتوبر 2016

اسلام آباد (این این آئی) صدر آزاد جموںوکشمیر سردار محمد مسعود خان نے کہا ہے کہ برہان مظفر وانی کی شہادت کے بعد نوجوانوں نے تحریک آزادی میں لازوال قربانیوں کی داستان رقم کردی ہے۔ مقبوضہ وادی کے ہر گلی محلے اور قصبوں میں ایک ہی نعرہ گونجتا ہے آزادی۔ وہاں کرفیو کا 101 واں دن ہے، خوراک اور ادویات کا بحران ہے۔ اسکے باوجود وہاں روز ایک ریفرنڈم ہوتا ہے جس کا فیصلہ ہے کہ بھارتی غلامی قبول نہیں، حریت پسند قیادت پابند سلاسل ہے۔ سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق، یاسین ملک اور شبیر شاہ صعوبتیں براداشت کر رہے ہیں۔ یاسین ملک کو علیل ہونے کے باوجود علاج معالجے کے سہولت نہیں دی جارہی، دنیا میں ہر انقلاب کا ایک رنگ ہوتا ہے اس وقت مقبوضہ جموںوکشمیر میں برپا انقلاب کا رنگ گہرا سبز ہے جو اس بات کی گواہی ہے کہ پاکستان اور کشمیر لازم و ملزوم ہیں ایک کے بغیر دوسرے کا وجود نامکمل ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز پاکستان آف کینفلیکٹ اینڈ سیکورٹی سڈیز (پکس) کے زیر اہتمام کشمیر اپ رائزنگ کے نام سے منعقد سمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ سردار مسعود خان نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں تمام بین الاقوامی قوانین، عالمی اصولوں اور حقوق انسانی کی سنگین خلاف ورزیاں کر رہا ہے۔ قابض افواج کالے قوانین کی آڑ میں خود کو کسی قانون کلیے سے ماورا سمجھتیں ہیں۔ عالمی برادری نے اس حوالے سے دوہرا معیار اپنا رکھا ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں انسانی راہداری قائم کی جانی چاہیے اقوام متحدہ کو عالمی تنازعات کے حل اور جنگوں کی روک تھام کیلئے بنایا گیا تھا۔ لیکن مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے وہ اپنی ذمہ داریاں پوری نہیں کر رہی۔ پاک چین اقتصادی راہداری جموں و کشمیر کے اندر سے گزرتی ہے۔ اسی بات نے ہندوستان کو بے چین کر رکھا ہے اور وہ پاکستان کیخلاف سازشوں میں مصروف ہے۔ وزیراعظم پاکستان کے جنرل اسمبلی سے خطاب کے اثرات سامنے آئے ہیں۔ جس کی وجہ سے بھارت کو فوری رد عمل ظاہر کرنا پڑا وزیر اعظم کی طرف سے بھیجے گے ایلچیوں کے بیرونی دوروں کے مثبت نتائج سامنے آئے ہیں۔