دہشت گردی پر برکس میں اصولی موقف اپنایا، راہداری سے پورا پاکستان مستفید ہوگا: چینی سفیر

19 اکتوبر 2016

اسلام آباد (جاوید صدیق) پاکستان میں چین کے سفیر سن وی ڈونگ نے کہا ہے کہ چین نیوکلیئر سپلائر گروپ میں نئے ارکان کی شمولیت کے بارے میں اپنے اصولی موقف پر قائم رہے گا۔ کسی خاص ملک کو این ایس جی میں شامل کرنے کے لئے قواعد اور اصول تبدیل نہیں کئے جا سکتے۔ جنوبی کوریا کے قومی دن اور مسلح افواج کے دن کی تقریب میں ’’نوائے وقت‘‘ سے بات کرتے ہوئے چینی سفیر نے کہا کہ چین دہشت گردی کے خاتمے کے لئے بھی اپنا موقف رکھتا ہے‘ دہشت گردی کا سب کو سامنا ہے‘ چین پاکستان بھارت افغانستان اور دوسرے ملکوں کو دہشت گردی کا سامنا ہے، اس دہشت گردی کا مل کر مقابلہ کرنا چاہئے لیکن کسی ایک ملک یا اس کے کسی مذہبی یا ثقافتی گروپ کو دہشت گرد قرار دینے کا چین مخالف ہے۔ چینی سفیر سے پوچھا گیا کہ بھارت میں برکس اجلاس کے موقع پر چینی صدر نے این ایس جی اور دہشت گردی کے حوالے سے پاکستان مخالف بھارتی ایجنڈے کو بے اثر بنا دیا جس پر چینی سفیر نے کہا کہ ہم نے اصولی موقف اپنایا۔ چینی سفیر سے استفسار کیا گیا کہ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ پر پاکستان میں ابھی تک کچھ تحفظات کا اظہار کیا جا رہا ہے اس پر چین کا کیا ردعمل ہے تو چینی سفیر نے کہا کہ میں نے اس سلسلے میں وضاحت کر دی ہے مشرقی روٹ ہو یا مغربی روٹ سب پاک چین اقتصادی راہداری کا حصہ ہیں‘ پورا پاکستان اقتصادی راہداری کے منصوبے سے استفادہ کرے گا۔ چینی سفیر کو جب نوائے وقت کے اس نمائندے نے خلا میں چینی خلا بازوں کو بھیجنے پر مبارکباد دی تو چینی سفیر نے مسکراتے ہوئے کہا کہ یہ ہماری کامیابی ہے۔ ان سے پوچھا گیا کہ پاکستان اور چین میں خلائی تعاون کی کیا صورتحال ہے تو چینی سفیر نے کہا کہ پاکستان اور چین کے درمیان خلائی تحقیق میں تعاون جاری ہے۔