پاک بھارت ٹریک ٹو مذاکرات کا فیصلہ‘ سابق سفیر‘ بیورو کریٹ‘ جرنیل‘ تاجرسرگرم

19 اکتوبر 2016

نئی دہلی (کے پی آئی) پاکستان اور بھارت کے درمیان تعلقات کو معمول پر لانے کے لئے دونوں ملکوں کے درمیان ٹریک ٹو سطح پر مذاکرات کا سلسلہ شروع کیا جا رہا ہے اور اس میں سرگرم رول ادا  کرنے والوں کا کہنا ہے کہ موجودہ تلخیوں اور ناچاقی کا عنقریب خاتمہ ہوگا۔ دونوں ملکوں کے سابق سفیر‘ سفارتکار‘ سابق وزراے خارجہ، ریٹائرڈ فوجی افسر، ریٹائرڈ بیوروکریٹ اور دونوں ملکوں کے سرکردہ صنعت کار سرگرم ہوگئے ہیں اور انہوں نے کہا ہے کہ عنقریب ٹریک ٹو سطح کے مذاکرات شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ مذاکرات یا تو لندن یا ہانگ کانگ میں منعقد ہو سکتے ہیں اور مذاکرات کے اختتام پر تجاویز دونوں ملکوں کو ان سفارشات کے ساتھ پیش کی جائیں گی کہ ان پر عمل کرنے سے بھارت اور پاکستان ایک دوسرے کے قریب آسکتے ہیں۔ اس سلسلے میں تیاریاں شروع کی جارہی ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق دونوں ملکوں کے درمیان کشیدہ تعلقات سے تجارتی تعلقات بھی متاثر ہونے لگے ہیں۔ اس سلسلے میں پاکستان کے تاجروں نے بھارت سے اون خریدنا ترک کر دی ہے۔ بتایا گیا ہے سرینگر‘ مظفر آباد اور پونچھ ،چکاندا باغ سے جو تجارت ہو رہی تھی اس میں بھی اب آہستہ آہستہ کمی آرہی ہے۔
ٹریک ٹو