بھارت کا جنگی جنون پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے سکتا ہے‘ ایاز صادق

19 اکتوبر 2016

اسلا م آباد (نمائندہ خصوصی) سپیکر قومی اسمبلی سر دار ایاز صادق نے کہا ہے کہ بھارت کا جنگی جنون نہ صر ف جنوبی ایشیا بلکہ پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے سکتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستا ن نے ہمیشہ تحمل اور بر داشت کا مظاہر ہ کیا ہے اور مسلسل کسی بھی جوابی کاروائی سے اجتناب کر رہا ہے تا ہم اگر بھا رت کی طر ف سے جنگ مسلط کرنے کی کوشش کی گئی تو پوری پاکستانی قوم مل کر اس کا جواب دے گی ۔انہوں نے کہاکہ پاکستانی قوم اور افواج ملکی سلامتی اور دفاع کے لیے متحد اور ہمہ وقت تیارہیں ۔ تر کی (انقرہ) سے موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق انہوں نے ان خیالات کا اظہار اسلا می ممالک کی پارلیمانی یونین PUICکے ایگزیکٹو کمیٹی کے 36ویں اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے کیا ۔اجلاس میں 57اسلامی ممالک کی پارلیمان کے سپیکر ،چیرمین ،صدور اور نمائندہ تنظیموںنے شر کت کی ۔انہوں نے کہا کہ تاریخ گواہ ہے کہ عوام میں اشتعال پیدا کرنے والی بنیادی وجوہات کے خاتمے کے بغیر امن واستحکام قائم نہیں کیا جاسکتا۔ انہوں نے شر کاءکو خبر دار کرتے ہوئے کہا کہ نہ صر ف بر صغیر بلکہ پورے خطے کی تر قی وخوشحالی صرف ایک خواب بن کر رہ جائے گا اگر عالمی برادری نے مسئلہ کشمیر سے پہلوتہی کی۔ ا نہوں نے کہا کہ بھارت کو خطے کے امن واستحکام کے لیے کشیدگی میں اضافے سے گریز کرنا چاہیے۔ انہوں نے عالمی برادری سے بھارت کی جارحیت پسندی پر نظر رکھنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے ہوکہاکہ کسی بھی ممکنہ جنگ کی صورت میں تمام تر ذمہ داری بھارت پر ہوگی۔سر دار ایاز صادق نے اجلاس کے شر کاءکو بھارتی فوج کی طر ف سے مقبوضہ کشمیر میں ڈھائے جانے والے مظالم اور آزادی کی تحریک میں شہید کیے جانے والوں کے اعداد شمارسے آگاہ کیا اور کشمیر میںبھارتی افواج کی جانب سے درندگی، حیوانگی اورپلیٹ گن کے ذریعے نا بیناں بنائے جانے والے بچوں کے ویڈیو کلپ بھی دکھائے ۔انہوں نے کہا کہ معصوم کشمیر ی خواتین اور بچوں پر بھارتی افواج کی طر ف سے بیہمانہ تشدد پوری دنیاکے لیے ایک سوالیہ نشان ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کی طر ف سے مظلوم کشمیری عوام پرظالمانہ کاروائیاں تمام مقامی اور بین الااقومی قوانین کی کھلی خلاف ورز ی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت اور سیکولر ریاست کی جھوٹے دعوایدار بھارت میںکشمیری عوام کو عید کی نماز پڑھنے اور دیگر مذہبی رسومات ادا کرنے تک کی اجازت نہیں۔اپنے اختتامی کلمات میں انہوں نے عالمی برادری پر کشمیر میں بگڑتی ہوئی صورت حال کا نوٹس لینے اور کشمیر میں ہونے والی انسانی حقو ق کی خلاف ورزیوں کو بند کروانے اور مذمت کرنے کی ضرورت پر زور دیا ۔انہوں نے بھارت کو مقبوضہ وادی میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کو فوری طور پر بند کرنے اور اقوام متحدہ کی سیکورٹی کونسل کی قرار دادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کو حل کرنے کے لیے کہا ۔
ایاز صادق

EXIT کی تلاش

خدا کو جان دینی ہے۔ جھوٹ لکھنے سے خوف آتا ہے۔ برملا یہ اعتراف کرنے میں لہٰذا ...