گیس لوڈشیڈنگ کے حکومتی فیصلے کےخلاف سپریم کورٹ میں درخواست دائر

19 اکتوبر 2016

اسلام آباد(نمائندہ نوائے وقت)سپریم کورٹ میں گیس لوڈشیدنگ کرنے کے حکومتی فیصلے کے خلاف آئینی درخواست دائر کردی گئی ہے ، درخواست میں گیس لوڈشیڈنگ کے فیصلے کو معطل کرنے  کیلئے ازخود نوٹس لینے کی استدعا کی گئی ہے ، درخواست سینیٹر ڈاکٹر بابر اعوان نے دائر کی ،درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ گیس کی لوڈشیڈنگ کرنا انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے ، گیس کی سہولت اس وقت شہریوں کی بنیادی ضرورت ہے، پنجاب میں سات سے دس گھنٹے گیس لوڈ شیڈنگ سے زندگی مفلوج ہو جائے گی،حکومت ایک طرف بیرون ملک سے ایل این جی منگوا رہی ہے دوسری طرف قدرتی گیس کی لوڈ شیڈنگ کی بات کرنا سمجھ سے بالا تر ہے۔درخواست گزارنے مزید موقف اختیار کیا ہے کہ حکومت کا گیس لوڈ شیڈنگ کا فیصلہ صارفین کو منافع خوروں کے رحم وکرم پر چھوڑنے کےمترادف ہے۔ سپریم کورٹ حکومت کو گیس لوڈ شیڈنگ کے فیصلے سے روکے اور سردیوں میں گیس کی فراہمی بلا تعطل جاری رکھنے کا حکم دے،درخواست میں قطر کے ساتھ ایل این جی گیس معاہدے کی جانب عدالت کی توجہ مبذول کرواتے ہوئے استدعا کی گئی ہے کہ معاہدے کی تفصیلات عدالت میں منگوائی جائیں تاکہ اس کو جوڈیشل کسٹڈی میں رکھا جائے۔
درخواست دائر