مغربی روٹ پاکستان کا ندرونی معاملہ سی پیک کی مکمل حامی ہے عمران خان

19 اکتوبر 2016

اسلام آباد(اپنے سٹاف رپورٹر سے+ وقائع نگار) پاکستان میں عوامی جمہوریہ چین کے سفیر نے منگل کے روز بنی گالہ میں چیئرمین تحریک انصاف عمران خان سے ملاقات کی چینی سفیر نے پی ٹی آئی کے سربراہ سے سی پیک منصوبے کے حوالے سے امور پر گفتگو شروع کی تو عمران خان نے دو ٹوک کہا کہ اس منصوبے میں میری جماعت اپنی حکومت کے ساتھ ہے سی پیک کیلئے مغربی روٹ پاکستان کا ندرونی معاملہ ہے جس کیلئے حکومتی پارٹی نے بھی تحریک انصاف کی قرارداد کا ساتھ دیا تھامغربی روٹ پر جو موقف تحریک انصاف کا ہے وہی موقف مسلم لیگ ن کی حکومت کے ارکان کابھی ہے تاہم مسلم لیگ ن کی حکومت ہمارے خلاف یہ چورن بیچ رہی ہے کہ تحریک انصاف سی پیک روکنا چاہتی ہے جبکہ ہمارا 2 نومبر کا احتجاج ہمارے اصولی موقف کا حصہ ہے اس موقع پر چینی سفیر نے انہیں بتایا کہ یہ میری خیر سگالی میٹنگ ہے عمران خان نے میٹنگ میں شریک شاہ محمود قریشی ، نعیم الحق ، ڈاکٹر شیریں مزاری سے ان کا تعارف کرایا اور کہا کہ میری جماعت ملکی ترقی کیلئے سی پیک کی مکمل حامی ہے ۔ پاکستان تحریک انصاف نے2 نومبر کے اسلام آباد لاک ڈائون کیلئے دو ٹوک حکمت عملی تیار کرلی ہے جس میں ایک پہلو یہ بھی طے کیا گیا ہے کہ اس احتجاج کو روکنے کیلئے حکومت کی طرف سے مذاکرات کیلئے کسی پیشکش کا خیر مقدم نہیں ہوگا تاہم اگر وفاقی حکومت ہمارے اور اپوزیشن کے ٹی او آرز مان لے تو اس کے مطابق وزیر اعظم نواز شریف خود کو احتساب کیلئے پیش کردیں ایسی صورت میں انہیں پہلے مستعفی ہونا پڑے گا کیونکہ وزیر اعظم کی حیثیت سے تفتیش اور احتساب کرنے والے تمام ادارے ان کے ما تحت ہیں پی ٹی آئی ذرائع نے نوائے وقت کو بتایا کہ پارٹی لیڈر شپ نے یہ بھی طے کیا ہے کہ جس وقت وکلاء تحریک چل رہی تھی اس موقع پر عدالت میں کیس بھی چل رہا تھا لیکن وکلاء ، سول سوسائٹی اور سیاسی جماعتوں کاسڑکوں پر ساتھ ہی احتجاج بھی ہو رہا تھا پی ٹی آئی اس تاثر کو بھی زائل کرنے کیلئے مہم چلائے گی کہ اس کے لاک ڈائون کے پیچھے کوئی مقتدر ادارہ نہیں بلکہ یہ احتجاج خالصتاً پی ٹی آئی ملک سے کرپشن کے خلاف کر رہی ہے اور پانامہ لیکس پرپی ٹی آئی نے جو پالیسی دے رکھی ہے اسے منطقی انجام تک لے جایا جائے گا۔ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان بدھ کے روز ملتان اور فیصل آباد کے دورے پر روانہ ہوں گے20 اکتوبر کو عمران خان ملتان میں پارٹی رہنمائوں اور کارکنوں سے ملاقاتیں کریں گے جبکہ21 اکتوبر کو عمران خان فیصل آباد جائیں گے۔ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی زیر صدارت میڈیا حکمت عملی کمیٹی کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ اب پاناما لیکس پروزیر اعظم نواز شریف کو مزید رعایت ہر گز نہیں دی جائے گی اجلاس بنی گالا میںچیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان کی رہائش گاہ پر ہوااجلاس میں مرکزی سیکرٹری اطلاعات نعیم الحق، ترجمان چیئرمین تحریک انصاف شیریں مزاری ،رکن قومی اسمبلی اسد عمر، وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی،سیکرٹری جنرل جہانگیر خان ترین، افتخار درانی، عثمان ڈار سمیت دیگر نے شرکت کی اجلاس میں ن لیگ کی جھوٹی پروپیگنڈاہ مہم کا تفصیلی جائزہ لیا گیا عمران خان کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں اسلام آباد لاک ڈان کے حوالے سے مختلف پہلوں پر بھی تفصیلی غورکیا گیا۔ وقائع نگار کے مطابق پاکستان تحریک انصاف نے دو نومبر کو اسلام آباد میں دھرنے اور جلسے کے لیے تاحال ضلعی انتظامیہ سے رابطہ نہیں کیا ہے ۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر (جنرل) کیپٹن (ر) عبدالستار عیسانی نے نوائے کو بتایا کہ پی ٹی آئی کو اسلام آباد میں جلسے یا دھرنے کی مشروط یاغیر مشروط طور پر کوئی اجازت نہیں دی ہے انہوں نے کہا کہ ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کو جلسے یا دھرنے کی اجازت کے لیے پی ٹی آئی کی کوئی درخواست موصول نہیں ہوئی ہے۔
عمران خان