ایم سی آئی کے 300 فائر فائٹرز 3 ماہ سے تنخواہوں سے محروم

19 جون 2017

اسلام آباد(وقائع نگار)اسلام آباد مےٹرو پولےٹےن کارپورےشن( اےم سی آئی ) کی انتظامےہ کی عدم توجہ 300سو فائر فائٹرز تےن ماہ سے تنخواہوں سے محروم ہےں اےم سی آئی نے فائرسےزن کے لےے 54لاکھ روپے ماہانہ پر آگ بجھانے کے لےے مقامی افراد کی خدمات حاصل کےں تاہم انہےں تنخواہےں ادا نہےں کےں جس کے باعث مارگلہ ہلز پر آگ لگنے کے واقعات مےں کمی کی بجائے اضافہ ہوا ہے ۔ذرائع کے مطابق اسلام آباد مےٹر وپولےٹےن کارپورےشن ( اےم سی آئی ) کی انتظامےہ نے فائرسےزن مےں مارگلہ کی پہاڑےوں پر آگ لگنے کے واقعات کی روک تھام کے لےے عارضی طورپر بھرتی کےے جانے والے تےن سو فائرفائٹرز کو تےن ماہ گزرنے کے باوجود ان کی تنخواہےں ادا نہےں کی ہےں اس زرےعے کے مطابق اےم سی آئی ہرماہ ان تےن سو فائرفائٹرز کو 54لاکھ روپے کی تنخواہ اداکرتا ہے تاہم ےہ تنخواہ ادا نہ ہونے کے باعث اس کا بل اب 1کروڑ 62لاکھ روپے سے تجاوز کرچکا ہے واضح رہے کہ اےم سی آئی مذکورہ فائرفائٹرز ہرسال فائرسےزن کے دوران چارماہ کے لئےے بھرتی کرتا ہے جس مےں بڑے پےمانے پر جعلی ملازمےن بھی شامل ہوتے ہےں ان ملازمےن مےں بڑی تعداد مارگلہ ہلز کے اطراف مےں موجود دےہاتوں کے نوجوان ہےں جن کی خدمات اس مقصد کے لےے حاصل کی جاتی ہےں ۔