مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم عالمی برادری کیلئے لمحہ فکریہ ہیں: عبدالرشید ترابی

19 جون 2017

مظفرآباد (صباح نیوز) جماعت اسلامی آزاد جموں وکشمیر کے امیر و ممبر قانون سازاسمبلی عبدالرشید ترابی نے کہا ہے کہ قابض بھارتی افواج مقبوضہ کشمیر میں اس ماہ مقدس میں بھی بدترین انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور مسلمانوں کو عبادت گاہوں میں جانے سے روک رہی ہیں جو عالمی اور اسلامی برادری کے لیے لمحہ فکریہ ہے۔ بھارت کی یہ بھول ہے کہ وہ ظلم وتشدد سے آزادی کی تحریک کو دبا سکے گا۔ آزادکشمیر میں ترقیاتی اور غیر ترقیاتی بجٹ میں توازن ہونا چاہےے۔ بیس کیمپ کی ترجیحات کا محور تحریک آزادی کشمیر ہونی چاہےے۔ بجٹ میں شہداءکے خاندانوں اور مہاجرین کی آبادکاری کے لیے رقم کا مختص ہونا وقت اور حالات کا تقاضا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ اچھی حکمت عملی اور درست منصوبہ بندی کر کے آزاد خطے کو یورپ سے ترقی میں آگے لے جایا جا سکتا ہے یہ تحریک آزادی کا بیس کیمپ بھی ہے یہاں کی تعمیر و ترقی اور مسائل کے حل سے جو ماڈل ریاست بنے گی وہ مقبوضہ کشمیر کے عوام کے لیے بھی باعث رغبت ہو گی۔ کشمیریوں نے اپنے حصے سے بڑھ کر قربانیاں پیش کردی ہیں ان کی قربانیوں کو بارآور کرنے کے لیے بیس کیمپ اور پاکستان کا کردار فیصلہ کن ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹورازم کو ترقی دی جاسکتی ہے یورپی ممالک میں مقیم تارکین وطن کے بچوں کو کشمیر لانے کا اہتمام کیا جائے تو ٹورازم بھی پرموٹ ہو گا۔ کشمیر بنک کی شاخوں کو دنیا بھر میں قائم کیا جائے یہ آمدنی کا بڑا ذریعہ ہوسکتا ہے۔ کشمیری جو زرمبادلہ بھیجتے ہیں اس کا حصہ بھی کشمیریوں کو ملنا چاہےے۔

عبدالرشید ترابی