ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی بورڈ نے تین نئی کمپنیوں کو ادویات سازی کی اجازت دیدی

19 جون 2017

اسلام آباد(قاضی بلال)ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کے مرکزی لائسنسنگ بورڈ نے تین نئی کمپنیوں کو ادویات سازی کی اجازت دیدی ۔ اس کے علاوہ مزید چھ کمپنیوں کو اضافی سیکشن میں ادویات سازی کی اجازت دی گئی۔ سات نئی کمپنیوں کے لائسنس کی تجدید کر دی گئی ہے ۔ اسکے علاوہ چھ کمپنیوں کو شو کاز نوٹسز جاری کئے گئے اور ان کو وارننگ دی گئی ہے کہ ڈرگ ایکٹ کی خلاف ورزی پر ان کے لائسنس معطل اور منسوخ بھی کئے جا سکتے ہیں ۔ جن کمپنیوں کو شو کاز نوٹسز دیئے گئے ان میں ہیلی کون پاکستان فیصل آباد ¾ حافظ فارما انڈسٹری کامونکی ¾ ایورسٹ فارماسوٹیکل اسلام آباد ¾ وی ٹیک اسلام آباد ¾ عثمان انٹرپرائزز کراچی ¾ گابا فارماسوٹیکل کراچی شامل ہیں ۔ سات کمپنیوں کے لائسنس کی تجدید کی گئی ہے ۔ اس میں ایم بی ایل فارما حب بلوچستان ¾ سٹی فارما سوٹیکل کراچی ¾ ڈان ویلی فارماسوٹیکل لاہور ¾ ارضا فارما لاہور ¾ گریز فارماسوٹیکل روات ¾ ریکو لاہور ¾ ویل اینڈ ویل فارما راولپنڈی کے ادویات سازی کے لائسنس منظور کئے گئے ہیں ۔ اس کے علاوہ مزید تین نئی کمپنیوں کو لائسنس دیئے گئے ہیں ان میں ایولیشن فارما سوٹیکل راوات ¾ انونٹر فارما کراچی ¾ ٹربل اے ہیلتھ فارماسوٹیکل راوات کو نئی ادویات بنانے کے لائسنس دیئے گئے ہیں ۔ پیراڈائیز ¾ آئی سی آئی پاکستان جاوا ¾ ارضا ¾ ریڈیان اور ویل اینڈ ویل فارما کو چار لاہور اور راولپنڈی اور قصور کی کمپنیوں کو نئے سیکشن کھولنے یعنی نئی ایک دوا بنانے کی بھی اجازت دیدی گئی ہے۔ یہ تمام فیصلے لائسنسگ بورڈ کے اجلاس میں کئے ہیں ۔ ملٹی نیشنل کمپنیوں کے گٹھ جوڑ کے خاتمے کیلئے موجودہ حکومت مقامی ادویات سازی کمپنیوں کی حوصلہ افزائی کر رہی ہیںتاکہ ملک میں مقامی ادویات کو فروغ دیا جا سکے ۔