ایک تصویر ایک کہانی…

19 جون 2017

طاہر مال روڈ پر گاڑیاں صاف کرتا ہے جس کا کام کاج کے دوران ہاتھ مشین میں آکر کٹ گیا تھا اور وہ ٹریفک سگنل پر کھڑی گاڑیوں کو صاف کرتا ہے۔ کوئی شہری دس‘ بیس‘ پچاس اور سو روپے بھی دے جاتا ہے۔ اس نے بتایا کہ پولیس اہلکار کھڑے نہیں ہونے دیتے۔ پریس کا کام کرتا تھا۔ بیس سال گزر گئے مگر ڈاکٹر ہاتھ نہ بچا سکے۔ اب وہ ہر کام ایک ہاتھ سے کرتا ہے اور روزانہ پانچ سے چھ سو روپے اکٹھے کر لیتا ہے۔ اس کے دو بچے ہیں اور وہ دریا کے کنارے جھگیوں میں رہتا ہے(فوٹو: عابد حسین)