کراچی کو دنیا کا بہترین شہر بنانے کے لئے راتیں قربان کیں، مصطفی کمال

19 جون 2017

کراچی(نیوز رپورٹر) چیئرمین پاک سرزمین پارٹی سید مصطفی کمال نے کہا ہے کہ 30 سالوں سے مہاجروں کے نام پر سیاست کے بعد بھی عوام کو پینے کا صاف پانی، گلی محلوں سے کچرے کے ڈھیر اسپتالوں میں ادویات کی قلت کے علاوہ کچھ حاصل نہیں ہوا، 3 مارچ کو ہم 2 لوگوں نے مرنے سے پہلے عوام کو سچائی سے آگاہ کرنے کیلئے اپنے حصے کی آواز لگائی، مصطفی کمال نے شہر کو دنیا کا بہترین شہر بنانےکے لئے اپنی راتیں قربان کیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے نیو کراچی ٹا¶ن کے زیر اہتمام افطار ڈنر کی تقریب میں علاوہ موشی اور عہدیداران و کارکان سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر پارٹی صدر انیس قائم خانی اور دیگر رہنما ان کے ہمراہ موجود تھے، سید مصطفی کمال نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ پاک سرزمین پارٹی میں شمولیت کرنے والوں نے اپنی سیٹوں اور عہدوں کو قربان کیا ہے مصطفی کمال نے اس شہر پر 300ارب روپے اس لیے خرچ نہیں کیے تھے کہ اس شہر کا یہ حشر کیا جائے جو آج ہے، انہوں نے کہا کہ تمام مراعات کو اس لیے چھوڑا کیونکہ جن کمروں میں ہم بیٹھتے تھے وہاں عوام کی فلاح کی بات نہیں ہورہی تھی، نیوکراچی کے عوام گواہ ہیں کہ ہم نے اپنے حصے کا کام کردیا ہے ہمارے کردار کو لوگ جانتے ہیں اسی لیے آج پاک سرزمین پارٹی پورے ملک اور جہاں کہیں پاکستانی آباد ہیں ہمارا تنظیمی سیٹ اپ موجود ہے، انہوں نے کہا کہ اس شہر میں آئے روز ایک جماعت کے رہنماوں کے شادی ہال گرائے جاتے ہیں، آج منتخب نمائندے عوام کے حقوق کیلئے ریلی نکالتے ہیں، لیکن احتجاجاً اپنی سیٹیں نہیں چھوڑتے اختیارات کا رونا رونے والوں نے ووٹ لیتے وقت اختیارات کے نہ ہونے کا نہیں بتایا تھا،انہوں نے کہا کہ مہاجر نام پر سیاست کرنا والا مہاجروں کا سب سے بڑا دشمن ہے مہاجروں کو دیگر قومیتوں سے لڑوا کر سیاست کرنا آسان ہے لیکن اس دشمنی سے کیا حاصل ہوا؟ ہم قلعے بنا کر نہیں رہ سکتے، ہمیں آپس میں جڑنا ہوگا آپس میں اتحاد پیدا کرنا ہوگا اگر ہم متحد نہیں ہوئے تو یہ ظالم حکمران ہم پر مسلط رہیں گے۔
مصطفی کمال