اسلام آباد میں 400 تجارتی عمارتیں خستہ حال‘ ایمر جنسی انخلا ندارد

19 جون 2017

اسلام آباد(آئی این پی) وفاقی دارالحکومت کے بڑے تجارتی مرکز بلیو ایریا میں موجود 400کے قریب عمارتوں کی خستہ حالت اور ایمرجنسی انخلاءنہ ہونے کی وجہ سے سی ڈی اے کے ڈائریکٹوریٹ ایمرجنسی اینڈ ڈیزاسٹر مینیجمنٹ کی طرف سے نشاندہی کے باوجود مالکان نے کوئی اقدام نہیں اٹھایا جبکہ ادارے نے بھی ان خلاف کوئی ایکشن نہیں لیا جو کہ انتہائی تشویش ناک ہے ۔ وفاقی ترقیاتی ادارے سی ڈی اے کے ڈاریکٹوریٹ ایمرجنسی اینڈ ڈیزاسٹر میننیجمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے 14ماہ قبل بلیو ایریا کی مذکورہ عمارتوں کی چیکنکنگ ک بعد ان کو خستہ حال اور خطرناک قرار دے دیا تھا اور مالکان کومطلع کیا تھا لیکن کوئی ایکشن نہیں لیا یہی وجہ ہے کہ ایک سال سے زائد کا عرصہ گزر جانے کے باوجود ان عمارتوں کے مالکان نے عمارتوں کو گرانے ےا مرمت پر توجہ نہیں دی جو کہ انتہائی تشویش ناک ہے ۔ چونکہ بلیو ایریا ایک بڑا تجارتی مرکز ہے اور عمارتیں ایک دوسرے کے ساتھ جڑی ہونے کی وجہ سے اگر کوئی خستہ حال پلازہ گرتا ہے تو وہ ارد گر د کی عمارتوں کو بھی نقصان پہنچائے گا اور یہاں مختلف کمنپیوں کے دفاتر اور ہسپتال بھی موجود ہیں لیکن اتنے بڑے مسئلے پر تو سی ڈی اے کے ڈاریکٹوریٹ ایمرجنسی اینڈ ڈیزاسٹر میننیجمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے ذمہ داران نے توجہ دی اور نہ ہی پلازوں کے مالکان نے ۔ ادارے اور پلازہ مالکان کی یہ لاپرواہی قیمتی انسانی جانوں کیلئے خطرہ ہے اور اس پر فوی ایکشن لینے کی ضرورت ہے ۔
خستہ حال