یتیموں کی کفالت ریاست کی ذمہ داری ہے‘ مصطفی کمال

19 جون 2017

کراچی(نیوز رپورٹر) پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال اور سیکریٹری جنرل رضا ہارون کی یتیم بچوں کیلئے پاکستان میڈیا کلب کی جانب سے منعقدہ تقریب ایک شام باہمت بچوں کے نام میں شرکت، اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سید مصطفی کمال نے کہا کہ یتیم بچوں کیلئے ایسے پروگرام کا انعقاد خوش آیند ہے ہمیں ان باہمت بچوں کو دیکھ کر بھی ہمت ملتی ہے، انہوں نے کہا کہ ان بچوں کی ہمت کو دیکھتے ہوئے ہم ایک باہمت معاشرہ تشکیل دے سکتے ہیں، پاکستان میڈیا کلب کی اس کاوش کو دل کی گہرائیوں سے سراہتے ہیں اور ہر سطح پر ایسے رفاعی و فلاحی کاموں کی پزیرائی کی جانی چاہیے، سیکریٹری جنرل رضا ہارون نے اپنے خطاب میں کہا کہ بدقسمتی سے ہمارے ملک میں بے سہارا اور یتیم بچوں کی کفالت کا کچھ ذمہ فلاحی تنظیموں نے اٹھا رکھا ہے لیکن حکومت کی مدد کے بغیر اس کا دائرہ کار وسیع نہیں ہوسکتا یتیموں کی کفالت ریاست کی آئینی ذمہ داری ہے اور دین اسلام بھی اس کا درس دیتا ہے، ریاست یتیم بچوں کی ماں اور باپ ہوتی ہے، رسول اللہ کی حدیث ہے کہ جوشخص یتیم کی کفالت کرے گا قیامت کے روز وہ میرے ساتھ کھڑا ہوگا، انہوں سوال کیا کہ قیامت کے روز یہ حکمران کہاں کھڑا ہوں گے جس ملک میں 42 لاکھ بچے یتیم ہوں، 1 کروڑ بچے غذائی قلت کی شکار ہو، 25 کروڑ بچے تعلیم سے محروم ہوں انہوں نے کہا مزید کہا کہ ریاست کی آئینی ذمہ داری ہے کہ وہ یتیموں کی کفالت کیلئے خصوصی اقدامات کرے اور ان کی مکمل سرپرستی کرے تاکہ ان بچوں کو معاشرے کا بہترین شہری بنایا جاسکے اور یہ بچے اس ملک کی ترقی نہ اپنا نمایاں کردار ادا کریں۔