اہلکاروں کا قتل‘ بغاوت‘ مولانا صوفی محمد‘ اور 23 ساتھیوں پر فرد جرم عائد

19 جولائی 2011
پشاور (مانیٹرنگ نیوز + ایجنسیاں) انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت نے کالعدم تحریک نفاذ شریعت محمدی کے امیر اور ان کے 23 ساتھیوں کے خلاف 11 پولیس اہلکاروں کے قتل ‘ اقدام قتل ‘ کار سرکار میں مداخلت اور ریاست کے خلاف بغاوت کے مقدمات میں فرد جرم عائد کر دی۔ کیس کی سماعت سنٹرل جیل پشاور میں ہوئی۔ عدالت نے مقدمے کے گواہوں کو 30 جولائی کو طلب کر لیا۔ اس سے قبل بھی صوفی محمد پر دوسرے مقدمات میں فرد جرم عائد کی جا چکی ہے۔
فرد جرم