سندھ ہائیکورٹ میں چودہ جولائی کو ہونے والے احتجاج کے دوران پندرہ معصوم افراد کی ہلاکتوں کی ایف آئی آر ذولفقار مرزا کے خلاف درج کی درخواست دائر ۔

19 جولائی 2011 (04:50)
سندھ ہائیکورٹ میں چودہ جولائی کو ہونے والے احتجاج کے دوران پندرہ معصوم افراد کی ہلاکتوں کی ایف آئی آر ذولفقار مرزا کے خلاف درج کی درخواست دائر ۔
سندھ ہائیکورٹ میں درخواست فلاحی سماجی رہنما رعنا فیض الحسن نے دائرکی ہے۔ درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ تیرہ جولائی کو سینیئر وزیر کے اشتعال انگیز بیان کے بعد چودہ جولائی کو ہونے والے احتجاج کے دوران پندرہ معصوم افراد کی ہلاکتوں کی ایف آئی آر ذولفقار مرزا کے خلاف درج کی جائے۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ مہاجر قوم کے خلاف بیان کی وجہ سے شہر میں ہونے والے احتجاج سے پانچ ارب روپے کا مالی نقصان بھی ہوا جبکہ سینیئر وزیر کے اشتعال انگیز بیان کے خلاف پارٹی سطح پر بھی کوئی ایکشن نہیں لیا گیا۔ درخواست میں مؤقف اختیارکیا گیا ہے کہ معصوم جانوں اور کراچی میں ہونے والے نقصانات کے ازالے کے لیے سینیئر صوبائی وزیرذولفقار مرزا کے خلاف ایف آئی آر درج کی جائے۔