وفاقی حکومت نے بجٹ خسارہ پورا کرنے کیلئے بنکوں سے بھاری قرضے لے لئے

18 نومبر 2012


لاہور (رپورٹ: احسن صدیق) وفاقی حکومت کی جانب سے بنکوں سے بجٹ خسارہ پورا کرنے کیلئے بے تحاشہ قرضے لینے، بجلی اور گیس کے بحران اور کراچی میں امن و امان کی مخدوش صورتحال کے باعث رواں مالی سال 2012-13 میں جولائی سے ستمبر کے دوران لارج سکیل صنعتی شعبے کی شرح نمو مجموعی طور پر 1.85 فیصد رہی جو گزشتہ مالی سال 2011-12 میں اتنی مدت کے دوران 3.35 فیصد کی شرح نمو کے مقابلے میں ڈیڑھ فیصد کم ہے۔ وفاقی وزارت صنعت و پیداوار کے تازہ اعداد و شمار کے مطابق لارج سکیل صنعتی شعبے کی شرح نمو 1.85 فیصد رہی ہے جبکہ کئی صنعتوں کی شرح نمو منفی ہو گئی ہے۔ اس میں ٹیکسٹائل، آٹوموبیل، کھاد، الیکٹرونکس، انجینئرنگ مصنوعات کی صنعتیں شامل ہیں۔ ان صنعتوں کی شرح نمو منفی ہونے سے خدشہ پیدا ہو گیا ہے کہ برآمدات میں کمی ہو گی۔ سٹیٹ بنک کی تازہ رپورٹ کے مطابق حکومت نے جولائی سے 2 نومبر تک بنکوں سے 450.2 ارب روپے کے قرضے لئے۔ اس صورتحال پر ایوان صنعت و تجارت کے رہنماﺅں نے تشویش ظاہر کی۔