سوڈان اور مسلم ممالک کشمیریوں کے حق میں آواز اٹھائیں: منورحسن

18 نومبر 2012


لاہور (سٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی سید منور حسن نے، جو ان دنوں سوڈان کے دورے پر ہیں، اپنے وفد کے ہمراہ سوڈان کے صدر عمر حسن البشیر سے ملاقات کی۔ لیاقت بلوچ اور عبدالغفار عزیز بھی شریک تھے۔ عمر البشیر نے کہا کہ امریکی اسرائیلی گٹھ جوڑ ایک کے بعد دوسرے مسلم ملک کو تباہ کرنا چاہتا ہے۔ مسلمان ملک متحد ہو کر دشمن کو ناکام بنا سکتے ہیں۔ غزہ پر تازہ اسرائیلی جارحیت پر تبصرہ کرتے ہوئے سوڈانی صدر نے کہا کہ فلسطینی عوام کا اصل جرم اپنے حقوق سے دستبردار نہ ہونا ہے۔ چند ہفتے قبل خرطوم میں ایک اسلحہ فیکٹری پر بھی اسرائیل نے جارحیت کی۔ سید منور حسن نے پاکستان اور خطے کی صورتحال پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ جنوبی سوڈان کی علیحدگی تمام مسلم ممالک کے حصے بخرے کرنے کے عالمی منصوبے کا حصہ ہے۔ امریکی افواج نے افغانستان اور پاکستان کو بھی اپنی جارحیت کی آماجگاہ بنایا ہوا ہے۔ غزہ پر صہیونی جارحیت ہو یا جنوبی سوڈان کی علیحدگی ہر جگہ امریکی سازشیں اور سرپرستی واضح طور پر دیکھی جا سکتی ہے اور دیگر برادر مسلم ممالک مل کر کشمیری عوام کے حق میں آواز بلند کریں۔