ڈاکٹروں کے قتل اور اغوا کے خلاف احتجاج‘ گورنر مسعود کوثر سےمیڈیکل کے طالب علم کا ڈگری لینے سے انکار

18 نومبر 2012


پشاور (اے این این) خیبر میڈیکل کالج کے طالبعلم نے ڈاکٹروں کے قتل اور اغوا کے خلاف بطور احتجاج گورنر مسعود کوثر سے ڈگری لینے سے انکار کر دیا۔ خیبر میڈیکل کالج کی تقریب میں مسعود کوثر تقریب میں بطور مہمان خصوصی شرکت کر رہے تھے۔ ایک موقع پر جب میڈیکل کے امتحانات میں کامیاب ہونے والے ڈاکٹر سعود کا نام پکارا گیا تو انہوں نے ڈائس پر جا کر گورنر خیبر پی کے کے ہاتھوں سے ڈگری لینے سے احتجاجاً انکار کر دیا اور خیبر پی کے میں ڈاکٹروں کی ٹارگٹ کلنگ اور اغواءکے واقعات پر شدید احتجاج کیا۔ اس دوران انتظامیہ کے لوگ احتجاجی ڈاکٹر کو پنڈال سے باہر لے گئے۔ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر سعود نے کہا کہ میرے کوئی ذاتی مقاصد نہیں تھے۔ میں نے ڈاکٹروں کی ٹارگٹ کلنگ اور اغوا کے واقعات کے خلاف احتجاج کیا ہے۔ میں احتجاج کر کے گورنر خیبر پی کے کو اس مسئلے سے آگاہ کرنا چاہتا تھا۔ ہمیں ڈاکٹروں کے خلاف ناانصافی پر شدید تحفظات ہیں۔ تقریب میں طلبا کے والدین اور عمائدین کی بڑی تعداد بھی شریک تھی۔