حقیقت پسندانہ فیصلوں کا وقت آ گیا‘ تنقید برائے تنقید اور جھگڑے ختم ہونے چاہئیں: وزیراعظم

18 نومبر 2012

اسلام آباد (نوائے وقت نیوز + این این آئی) وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے پاکستان کو عظیم تر ملک بنانے کا عزم کرتے ہوئے کہا ہے کہ تنقید برائے تنقید اور جھگڑے ختم ہونے چاہئیں، افراد کے مضبوط ہونے سے ہی ملک مضبوط ہو گا، ہمیں اپنے رویوں میں تبدیلی لانا پڑےگی، متحد ہو کر ہی قومی مسائل حل کئے جا سکتے ہیں، دہشت گردی اور انتہا پسندی سمیت درپیش چیلنجوں سے مل جل کر نمٹنا ہو گا، شرح خواندگی میں اضافے کیلئے مل جل کر کوششوں کی ضرورت ہے، عوام کی فلاح و بہبود پیپلز پارٹی کے منشور کا حصہ ہے، جمہوری حکومت تعلیم کے بجٹ میں اضافہ کرےگی۔ وہ یہاں سلطانہ فاﺅنڈیشن میں بے سہارا اور بے سکول بچوں کی بحالی اور انہیں مرکزی دھارے میں لانے کیلئے شروع کئے گئے منصوبے ”جسٹس یوسف صراف سنٹر“ کے افتتاح کے موقع پر خطاب کر رہے تھے۔ اس موقع پر وزیراعظم کی معاون خصوصی بیگم شہناز وزیر علی اور پاکستان بیت المال کے مینجنگ ڈائریکٹر زمرد خان بھی موجود تھے۔ وزیراعظم پرویز اشرف نے کہا کہ حکومت کی کوشش ہے کہ تعلیم کیلئے بجٹ کو بڑھایا جائے، ہر مسئلہ کی کنجی افراد کے ہاتھوں میں ہوتی ہے، افراد کو مضبوط کر کے معاشرہ کو مضبوط کیا جا سکتا ہے، ہمیں پیچیدہ کاموں میں پڑنے کی بجائے آسان اور فلاحی کام کرنے چاہئیں تاکہ ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کیا جا سکے۔ وزیراعظم نے اس حوالے سے شمالی کوریا کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے خواندگی کا مقررہ ہدف 2 سال میں حاصل کر لیا تھا۔ ہمیں اپنی سمت درست کرنی چاہئے اور رویوں میں تبدیلی لانی چاہئے، وقت کی ضرورت ہے کہ ہم سب مل کر چلیں، قومی معاملات میں اتفاق رائے کی ضرورت ہوتی ہے، حکومت نے اس سلسلہ میں کوششیں کی ہیں جس کے مثبت نتائج برآمد ہوتے ہیں۔ ناممکن کچھ بھی نہیں ہوتا، ہمیں قومی خدمت کے جذبہ سے سرشار ہونا چاہئے، بڑا انسان وہ ہے جو خدمت اور بھلائی کے کام کرتا ہے، جسے خدا کے بندوں سے پیار ہو ہمیں بھی اس کی عزت و تکریم کرنی چاہئے۔ پاکستان کو اﷲ تعالیٰ نے ہر نعمت سے نوازا ہے، نوجوانوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے جو ہماری قوت ہیں، ملک میں آبادی کی درست تعداد معلوم کرنے کیلئے کام شروع ہے، ہماری آبادی میں اضافہ ہوا ہے جس سے ضروریات بھی بڑھ گئی ہیں۔ ہمیں عہد کرنا چاہئے کہ ہم مل کر پاکستان کو دنیا کا عظیم ملک بنائیں گے اور ہر طرح کی شدت پسندی اور انتہا پسندی کا خاتمہ کریں گے۔ حقیقت پسندانہ فیصلے کرنے کا وقت آچکا، ہم ایٹمی قوت ہیں ہم نے ثابت کیا ہے کہ ہم سب کچھ کر سکتے ہیں عوام کی فلاح و بہبود پیپلز پارٹی کے منشور کا حصہ ہے۔ جمہوری حکومت تعلیم کے بجٹ میں اضافہ کرےگی۔ آبادی بڑھنے سے پریشان ہونے کی ضرورت نہیں، آبادی زیادہ ہونے کے مثبت پہلو بھی ہیں، اس سے پریشان نہیں ہونا چاہئے۔ ہمارے پاس نوجوانوں سمیت بہترین افرادی قوت ہے۔ متحد ہو کر ہی قومی مسائل کو حل کیا جا سکتا ہے۔ دنیا میں کوئی چیز ناممکن نہیں، پاکستان ایٹمی قوت ہے، ہمارے پاس وسائل کی کمی نہیں۔ سمت درست ہو گی تو تیزی سے ترقی کی راہ پر گامزن ہو جائیں گے۔ تنقید برائے تنقید اور جھگڑے اب ختم ہو جانے چاہئیں۔ انہوں نے سلطانہ فاﺅنڈیشن کی انتظامیہ سے کہا کہ حکومت ان کے ساتھ پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کیلئے تیار ہے۔ وزیراعظم نے سلطانہ فاﺅنڈیشن کی مالی معاونت کیلئے 5 کروڑ روپے کا اعلان کیا۔