سندھ سے ہندو ”یاترا“ کے لئے بھارت جاتے ہیں، ہجرت نہیں کہا جا سکتا: چانڈیو

18 نومبر 2012


حیدرآباد (بی بی سی) سینیٹر مولابخش چانڈیو کا کہنا ہے کہ کہ سندھ سے ہندو برادری کے لوگ یاترا کے لئے بھارت ضرور جاتے ہیں اور ان میں سے بعض لوگ وہیں ٹھہر بھی جاتے ہوں گے لیکن اسے سندھ سے ہندو ¶ں کی بڑے پیمانے پر ہجرت کا نام نہیں دیا جا سکتا۔ یہ بات سینیٹر مولابخش چانڈیو نے بی بی سی اردو کو ایک انٹرویو میں کہی۔ ہندو¶ں کے حوالے سے مولابخش اور دیگر ارکان کمیٹی نے سندھ بھر میں سرکردہ ہندو شخصیات سے ملاقاتیں کر کے اپنی رپورٹ مرتب کی جو صدر زرداری کو پیش کر دی گئی ہے۔ سندھ میں ہندو برادری یوں تو ہر شہر اور ہر علاقے میں موجود ہے لیکن ضلع جیکب آباد اور کشمور سے ہندو برادری کے زیادہ لوگ یاترا کے لئے بھارت جاتے ہیں۔ جیکب آباد کے ایک ٹور آپریٹر منور چاولا کا کہنا ہے کہ آج کل بھارت میں یاترا کے لئے جانے والے لوگوں کی تعداد کم ہو گئی ہے۔