منموہن بلا تاخیر پاکستان کا دورہ کریں: بھارتی رکن پارلیمنٹ کا مشورہ

18 نومبر 2012

نئی دہلی (آن لائن) بھارت کے سینئر رکن پارلیمنٹ اور سابق سفارت کار مانی شنکر آئر نے بھارتی وزیر اعظم کو مشورہ دیا ہے کہ وہ بلا کسی تاخیر کے فوری طور پر پاکستان کا دورہ کریں ،وقت آگیا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان تلخیاں ختم کی جائیں اور بھارت پاکستان کے ساتھ اپنے رویے کو نرم کرے۔بھارتی اخبار ہندوستان ٹائمز کے زیر اہتمام 2 روزہ لیڈر شپ کانفرنس کے افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم منموہن سنگھ کا دورہ پاکستان دوطرفہ تعلقات میں بہتری لانے کے لئے اہم سنگ میل ثابت ہوگا اور بجاءاس کے کہ پاکستان میں ساز گار ماحول کا انتظار کیا جائے وزیر اعظم منموہن فوری طور پر دورہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کو اپنے تعلقات کا ایک نیا باب کھولنے کی ضرورت ہے۔ دوسری جانب بھارتی انٹیلی جنس بیورو کے سابق سربراہ اجیت کمار دووال نے مانی شنکر کی تجویز کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ جب تک دونوں ممالک کو مشترکہ خطرات کا سامنا ہو تب تک دونوں کا مشترکہ حکمت عملی اپنانا اور مل کر چلنا مشکل ہے ۔انہوں نے کہا کہ یہاں صورت حال مختلف ہے ،لشکر طیبہ بدستور بھارت کے لئے خطرہ لیکن پاکستان کے لئے وہ کوئی خطرہ نہیں۔حقانی نیٹ ورک بھارت اور افغانستان کے لئے خطرہ کا باعث ہے لیکن پاکستان کو اس گروپ سے کوئی خطرہ نہیں ہے اس صورت حال میں پاکستان کے ساتھ تعلقات کو کیسے مضبوط کیا جا سکتا ہے ۔انہوں نے اس الزام کو دوہرایا کہ پاکستان نے بھارت کے خلاف دہشت گرد حکمت عملی اپنا رکھی ہے اور اسی حکمت عملی کے ذریعے ہمارے شہروں پر حملے ہو رہے ہیں۔