نیو یارک خود کش دھماکے کی سازش میں ملوث ایک ملزم کو عمر قید کی سزا

18 نومبر 2012

نیویارک (آن لائن) افغانستان میں امریکی جنگ کا بدلا لینے کے لئے نیویارک شہر میں خود کش بم دھماکے کرنے کی سازش کے الزام میں ملوث تین افراد میں سے ایک کو گزشتہ روز عمر قید کی سزا سنا دی گئی۔ 34سالہ ایڈس میڈن جینن کو اس سازش میں شریک ہونے پر بروکلن کی فیڈرل کورٹ نے عمر قید کے علاوہ 95سال قید کی سزا کا بھی حکم سنایا۔ اس منصوبے کے تحت شہر کے سب وے نظام کو نشانہ بنانا مقصود تھا لیکن اس پر عمل نہیں کیا گیا ۔پراسیکیوٹر نے عدالت سے درخواست کی کہ ملزم کو عمر قید کی سزا دی جائے ۔استغاثہ کا کہنا تھا کہ میڈن جینن امریکی خارجہ پالیسی کو تبدیل کرنے اور اس کا انتقام لینے کی غرض سے اپنے ساتھی امریکی شہریوں کو ہلاک اور زخمی کرنے کی غرض سے متعدد بہیمانہ جرائم کا ارتکاب کر چکا ہے۔ بوسینیا نژاد میڈن جینن نے ، جس کی فیملی 1990ءکی دہائی میں سربیا کے ساتھ جنگ کے دوران بھاگ کر امریکہ چلی گئی تھی ، کو سمندر پار امریکی فوجیوں کو ہلاک کرنے ، القاعدہ سے فوجی تربیت لینے اور ملکی سرحدوں کے اندر دہشت گردی کی کارروائیاں کرنے کی کوشش کرنے کے الزامات پر سزا دی گئی ہے ۔اس مبینہ سازش میں ملوث دو دوسرے افراد نجیب اللہ زازی اور زرین احمدزے نے پہلے ہی اعتراف جرم کررکھا ہے اور اس امید پر اپنے پرانے دوست کے خلاف گواہی دی ہے کہ شاید اس کے صلے میں انہیں کم سزائیں دی جائیں گی ، ان کو آئندہ سال سزا سنائے جانے کا امکان ہے۔