ایک ہفتے میں بجلی کی فراہمی یقینی نہ بنائی تو ملیں بند کر دینگے: سابق چیئرمین اپٹما

18 نومبر 2012

لاہور (کامرس رپورٹر) آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن کے سابق چیئرمین اور گروپ لیڈر گوہر اعجاز نے حکومت کو الٹی میٹم دیا ہے کہ اگر پنجاب کی صنعتوں کو بجلی کی فراہمی ایک ہفتے میں یقینی نہ بنائی گئی تو پنجاب کی ٹیکسٹائل ملیں بند کر دیں گے، لاکھوں مزدور سڑکوں پر احتجاج کریں گے۔ انہوں نے اس امر کا اظہار گذشتہ روز ”اپٹما ہاﺅس“ میں پریس کانفرنس کے دوران کیا۔ اپٹما پنجاب کے چیئرمین شہزاد علی خان کے علاوہ دیگر ممبرز محمود احسان، ایس ایم عمران، سیٹھ اکبر وصال منوں اور دیگر موجود تھے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان سنگین بحرانوں سے دوچار ہے۔ وزارت پانی وبجلی کی جانب سے بجلی کی لوڈشیڈنگ نے صنعتکاروں کا جینا محال کر دیا ہے۔ پنجاب کی ٹیکسٹائل انڈسٹری کو رواں موسم سرما میں بھی بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہاکہ وزارت پانی و بجلی اپنا رویہ درست کر لے۔ اگر مزدور بے روزگار ہوئے تو پنجاب کے حالات کراچی سے بھی خراب ہونگے، ٹیکسٹائل ملوں کے لئے سردیوں میں گیس کی 180دنوں کے لئے بندش کو بھی قبول نہیں کیا جائے گا۔ صدر مملکت اور وزیراعظم سے مطالبہ کیا کہ وزارت پانی و بجلی کی نااہلی کا فوری نوٹس لیں اور ٹیکسٹائل انڈسٹری کو تباہ ہونے سے بچانے کے لئے کردار ادا کریں۔