عافیہ نے یہ عید بھی قید میں منائی، وزیراعظم واپس لانے کا وعدہ نبھائیں: فوزیہ صدیقی

18 جولائی 2015
عافیہ نے یہ عید بھی قید میں منائی، وزیراعظم واپس لانے کا وعدہ نبھائیں: فوزیہ صدیقی

کراچی (لیڈی رپورٹر) وزیر اعظم میاں نواز شریف عافیہ کی وطن واپسی کا وعدہ ایفا کریں۔ عافیہ کی پچیسویں عید بھی قید تنہائی میں گزری ہے۔ گزشتہ ایک سال سے عافیہ سے فون پر بات بھی نہیں کروائی گئی۔ ان خیالات کا اظہار دماغی امراض کی ماہر عافیہ موومنٹ پاکستان کی سربراہ ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے عافیہ موومنٹ سیکرٹریٹ سے جاری ہونے والے پریس ریلیز میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف نے خود عافیہ کی والدہ اور بیٹی مریم سے وعدہ کیا تھا کہ عافیہ کو واپس لائیں گے لیکن عافیہ کی واپسی تو درکنار گزشتہ ایک سال سے عافیہ کی اُس کی بیمار والدہ اور معصوم بچوں سے بات بھی نہیں کرائی گئی۔ وزیراعظم صاحب عافیہ کی فیملی سے کس بات کا بدلہ لے رہے ہیں۔ آخر کیا وجہ ہے کہ حکمرانوں کے قول و فعل میں تضاد ہوتا ہے۔ جب یہ اقتدار سے باہر ہوتے ہیں تو ان سے زیادہ ہمدرد و اور غمگسار کوئی نہیں ہوتا اور یہ جب اقتدار میں آجاتے ہیں تو رفتہ رفتہ ترجیحات تبدیل ہو جاتی ہے۔ انہوں نے کہا اگر وزیراعظم صاحب عافیہ کو واپس نہیں لا سکتے تو قوم کو بتائیں کہ اصل رکاوٹ کہاں ہے کون سا طبقہ ہے جو عافیہ کی واپسی سے خوفزدہ ہے۔ ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے آرمی چیف جنرل راحیل شریف سے بھی درخواست کی کہ وہ عافیہ کے معاملے میں انسانی ہمدردی کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنا مثبت کردار ادا کرے۔ قوم کے سامنے جنرل راحیل شریف ایک مسیحا کے طور پر نمودار ہوئے ہیں لہٰذا قوم اُن سے توقع کر رہی ہے کہ وہ عافیہ کی واپسی کے اتنے بڑے عوامی مطالبے کا احترام کرتے ہوئے عافیہ کی واپسی کے لئے ذاتی طور پر کوشش کریںگے ویسے بھی بیٹی کو رہائی دلاکر وہ محمد بن قاسم اور معتصم باللہ کی صف میں شامل ہو سکتے ہیں۔