آئی سی سی نے محمد حفیظ کا ایکشن غیر قانونی قرار دیکر بائولنگ پر ایک سال کی پابندی لگا دی

18 جولائی 2015
آئی سی سی نے محمد حفیظ کا ایکشن غیر قانونی قرار دیکر بائولنگ پر ایک سال کی پابندی لگا دی

لاہور (نمائندہ سپورٹس) آئی سی سی نے پاکستانی آل رائونڈر محمد حفیظ کا بائولنگ ایکشن غیر قانونی قرار دے کر ان کی بائولنگ کرنے پر ایک سال کی پابندی لگا دی ہے تاہم وہ بطور بیٹسمین کھیل سکیں گے۔ آئی سی سی کے مطابق محمد حفیظ 6 جولائی کو بھارت کے شہر چنائی میں اپنا بائولنگ ایکشن کلیئر کرانے میں ناکام رہے۔ آئی سی سی قوانین کے مطابق محمد حفیظ اپیل کا حق رکھتے ہیں۔ گزشتہ ماہ گال میں سری لنکا کے خلاف کھیلے گئے ٹیسٹ میچ کے دوران امپائرز نے محمد حفیظ کے بائولنگ ایکشن کو مشکوک رپورٹ کیا تھا۔ جس کے بعد حفیظ نے رواں ماہ 6 جولائی کو بھارت کے شہر چنائی کی ایک بائیو مکینک لیب سے ٹیسٹ کرایا۔ ٹیسٹ کے دوران ان سے 6 اوورز کرائے گئے جس میں ان کے بازو کے خم کا جائزہ لیا گیا۔ اس دوران وہ اپنا بائولنگ ایکشن کلیئر کرنے میں ناکام رہے۔ جس کے باعث آئی سی سی کی جانب سے ان پر پابندی عائد کی گئی۔ گزشتہ سال نومبر میں ابوظہبی میں نیوزی لینڈ کے خلاف ہوم سیریز کے دوران بھی بائولنگ ایکشن مشکوک رپورٹ ہونے کے بعد حفیظ کو بائولنگ سے روک دیا گیا تھا۔ بائولنگ ایکشن رپورٹ ہونے کے بعد محمد حفیظ نے سری لنکا کے خلاف ایک روزہ میچ میں چار وکٹیں حاصل کرنے اور سنچری سکور کرنے کا اعزاز حاصل کیا۔ دوسرے ون ڈے میں بھی وہ دو وکٹیں حاصل کرنے میں کامیاب رہے۔ محمد حفیظ کی بائولنگ پر پابندی سے پاکستان ٹیم کی سپن بائولنگ شعبے میں تجربہ کار بائولرز ختم ہوگئے ہیں۔ سعید اجمل کے بائولنگ ایکشن پر پابندی لگی لیکن وہ بائولنگ ایکشن کلیئر کرنے میں کامیاب تو ہوگئے لیکن بین الاقوامی کرکٹ سے ابھی تک دور ہیں۔ دوسری طرف تجربہ کار شاہد آفریدی ون ڈے کرکٹ سے ریٹائر ہوچکے ہیں۔