عدالتوں میں منتخب نمائندوں کو چور، ڈاکو کہنا قبول نہیں ادارے حدود میں رہیں وزیر اعظم

Feb 18, 2018

حافظ آباد (نمائندہ نوائے وقت+ نامہ نگار) وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ 20 کروڑ عوام کے منتخب نمائندوں کو عدالتوں میں چور، ڈاکو کہا جا تا ہے۔ عوام کے منتخب نمائندوں کو اس طرح کے لقب دئیے جائیں ہمیں کسی صورت بھی قبول نہیں۔ 20 کروڑ عوام کے نمائندہ ایوان سینیٹ، قومی اور چاروں صوبائی اسمبلیوںکا بنایا ہوا قانون رد یا ختم کر دیئے جائیں یہ چیز کسی بھی ملک میں قبول نہیں ہوتی، یہ عوام کی رائے کی نفی کرتی ہیں یہ فیصلے عوام کے ہیں انہیں عوام پر چھوڑ دینا چاہیے۔ ہم یہ چاہتے ہے کہ ہر کوئی ایک دوسرے کے اداروں کا احترام کرے۔ پاکستان میں عدالتیں جو بھی فیصلے کرتی ہیں ان پر من و عن عملدرآمد کیا جا تا ہے اس میں کوئی دو رائے نہیں، چاہے عوام انہیں قبول کرے یا نہ کرے اور عوام کے منتخب نمائندوں کے ایوان سینیٹ، قومی اور چاروں صوبائی اسمبلیاں اگر کوئی فیصلہ کریں تو بھی وہ سب کو قبول ہونا چاہیے۔ اداروں کو اپنی آئینی حدود میں رہتے ہوئے کام کرنا چاہیے۔پارلیمنٹ واحد ادارہ ہے جس کا ہر پانچ سال احتساب کیا جاتا ہے اور وہ احتساب عوام خود کرتی ہے جو نمائندہ ملک و قوم کی خدمت نہیں کرتا عوام اسے رد کر دیتی ہے۔ ذاتی عناد، پسند نہ پسند ایک طرف، سب سے بڑھ کر ملکی ترقی ہونا چاہیے۔ حافظ آباد میں ہیلتھ کارڈز تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا میاں نواز شریف کی سیاست کا فیصلہ کسی اور نے نہیں عوام نے کرنا ہے اور حال ہی میں لودھراں کی عوام نے میاں نوازشریف کی سیاست کا فیصلہ کردیا ہے۔ اس الیکشن سے ثابت ہوا ہے کہ عوام ترقی کے سفر کو جاری رکھنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا آج ملک میں صرف نواز شریف ہی ایک ملزم نظر آتا ہے جس کے خلاف عدالتوں میں مقدمے چل رہے ہیں لیکن ابھی تک ان پرکرپشن کی ایک پائی بھی ثابت نہیں ہوئی۔ سینٹ الیکشن میں دھاندلی نہیں ہونے دینگے ،پیسے کے بل بوتے پر سینٹ الیکشن میں آنے والوں کو الیکشن سے پہلے بھی اور بعد میں بھی روکیں گے۔ پیسے کے بل بوتے پر چند ایم پی ایز کا ضمیر خریدنے والے کبھی پاکستان کی خدمت نہیں کر سکتا ہم ایسے لوگوں کا ڈٹ کر مقابلہ کرینگے۔وزیر اعظم نے کہا کہ آج ملکی ترقی کو آگے بڑھانا بہت ضروری ہے سب اداروں کو ایک دوسرے کی عزت و احترام کرنا چاہیے۔ انہوں نے کہا عوامی نمائندگی کوئی آسان کام نہیں بلکہ ایک مشکل کام ہے جس علاقے کے نمائندے اچھے ہونگے وہ نہ صرف اپنے علاقے کے لئے بہترین ثابت ہوتے ہیں بلکہ وہ ملکی مسائل پر بھی بات کر سکتے ہیں ہمیں فخر ہے کہ ہماری جماعت کی قیادت میاں نواز شریف کر رہے ہیں جنہوں نے ہمیشہ عوامی ترقی اور انکے مسائل کے حل کی بات کی ،میں دعوے سے کہتا ہوں مسلم لیگ ن نے جتنے بھی منصوبے شروع کیے انہیں مکمل بھی کیا اور اس بات کی مثال ملکی 65سالہ تاریخ میں نہیں ملتی۔ انہوں نے کہا کہ ریکارڈ کی بات ہے جب مسلم لیگ ن کی حکومت آئی تو ملکی گرڈ میں 17ہزار میگا واٹ بجلی تھی ہم نے موجودہ دور حکومت میں 10400میگا واٹ بجلی پیدا کی ،صنعتوں اور گھریلو صارفین کو بلا تعطل بجلی اور گیس فرام کی ،ملک میں زراعت کے شعبہ نے لازوال ترقی کی۔ 2018کے الیکشن میں بھی جیت مسلم لیگ ن کی ہی ہوگی کیونکہ عوام میاں نواز شریف کی ترقی کے سفر کو جاری اور مکمل دیکھنا چاہتے ہیں۔وزیر اعظم نے حافظ آباد میں یونیورسٹی کیمپس بنانے سمیت مختلف سڑکوں اور گیس کے منصوبوں کا بھی اعلان کیا۔ وفاقی وزیر صحت سائرہ افضل تارڑ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا عوام نے فیصلہ کر لیا ہے کہ وہ ترقی کے سفر کے ساتھ ہیں کسی مفاد پرست اور اقتدار کے پجاریوں کے ساتھ نہیں۔ مخالفین نے ہمارا مقابلہ کرنا ہے تو عوام کی خدمت میں کریں ،پگڑیاں اچھالنے میں نہیں ،اقتدار کی ہوس اور نشہ میں عوام کی خدمت نہیں ہوتی۔ انہوں نے اپوزیشن کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن کے وعدے اور منشور کہاں گیا۔ انہوں نے تو پانچ سال میاں نواز شریف کو گرانے میں ہی ضائع کر دیے،اپوزیشن کے دھرنوں اور احتجاج نے پوری قوم اور ملک کو نقصان پہنچایا اب عوام ایسے مفاد پرستوں کے کسی دھوکے ،فریب میں نہیں آئینگے کیونکہ وہ اپنی اور اپنے ملک کی ترقی چاہتے ہیں۔ انشاء اللہ 2018کے انتخابات میں بھی فتح مسلم لیگ ن کی ہی ہو گی انہوں نے کہا کہ میاں نواز شریف نے بلا تفریق پاکستانی عوام کے لئے صحت کارڈ شروع کرنے کا فیصلہ کیا اور آج ہمیں خوشی ہے کہ ہم ہر غریب کے مفت علاج کے اس پروگرام میں کامیاب ہوئے ہیں ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر صحت خواجہ سلمان رفیق نے کہا کہ وزیر اعظم ہیلتھ کارڈز کے اس پروگرام سے صوبہ بھر کے 8لاکھ خاندان اور تین کروڑ لوگ مستفید ہو رہے ہیں۔30اپریل تک جنوبی پنجاب کے غریب افراد کو صحت کارڈز کی سہلوت فراہم کرینگے۔ میاں شہباز شریف صوبہ بھر کے عوام کو صحت اور تعلیم کی جدید اور معیاری سہولیات فراہم کرنے کے لئے ہر وقت سرگر م دکھائی دیتے ہیں ،شہباز شریف خود سوتے ہیں نہ ہمیں سونے دیتے ہیں ۔اٹھارہ،اٹھارہ گھنٹے کام کرتے ہیں ہمارا ضمیر مطمئن ہوتا ہے کہ ہم نے عوام کی خدمت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو ہیپاٹائٹس جیسے مرض سے چھٹکارا دلوانے کے لئے ہنگامی بنیادوں پر کام کیا جا رہا ہے ۔ضلع اور تحصیل کی سطح پر ہیپاٹائٹس کنٹرول پروگرام شروع کیے گئے ہیں ۔ہیپا ٹائٹس کے مریضوں کو مفت ادویات کی سہولت فراہم کر رہے ہیں جس کی قیمت انٹر نیشنل لیول پر 80ہزار ڈالر تھی انہوں نے کہا کہ صحت کارڈز کا یہ پروگرام پنجاب، سندھ، خیبر پی کے،بلوچستان،کشمیر اور گلگت تک پہنچا رہے ہیں۔ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی حافظ آباد میں صحت کارڈ کی تقسیم کی تقریب میں مسلم لیگ ن سے تعلق رکھنے والے دو مقامی ممبران اسمبلی ملک فیاض احمد اعوان اور چوہدری اسعد اﷲآرائیں نے شرکت نہ کی۔ لیگی ایم پی اے ملک فیاض احمد اعوان نے رابطہ کرنے پر بتایا انکے مسلم لیگ (ن) کی مقامی قیادت سے اختلافات چلے آرہے ہیں جو بلدیاتی انتخابات سے شروع ہوئے تھے ۔ اگر چہ یہ اختلافات معمولی تھے لیکن حل نہ ہونے کی وجہ سے بڑھتے چلے جارہے ہیں ۔ وہ پیپلز پارٹی چھوڑ کر مسلم لیگ (ن) میں آئے تھے لیکن مسلم لیگ (ن) کی مقامی قیادت نے انہیں کبھی بھی دل سے تسلیم نہیں کیا۔ دوسری جانب لیگی ایم پی اے چوہدری اسعد اﷲآرائیں نے کہا کہ چونکہ اس تقریب میں ملک فیاض احمد اعوان ایم پی اے نہیں گئے اس لئے وہ بھی نہیں گئے۔

وزیراعظم

لاہور (خصوصی رپورٹر) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی گزشتہ روز لاہور ائرپورٹ سے بذریعہ ہیلی کاپٹر جاتی امرا پہنچے جہاں انکا استقبال وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف اور وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق نے کیا اور انہیں اپنے ہمراہ لیکر میاں نواز شریف کے پاس گئے جہاں ان رہنمائوں کی ملاقات ہوئی جس میں ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال اور رابطہ عوام مہم پر تبادلہ خیال کیا گیا اور رابطہ عوام مہم تیز کرنے پر اتفاق کیا گیا۔ ذرائع نے بتایا وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے پارٹی کے سربراہ میاں نواز شریف کو لودھراں کے ضمنی الیکشن میں شاندار فتح پر مبارکباد دی۔ ذرائع نے بتایا نواز شریف نے انہیں بتایا وہ لودھراں کے عوام کا شکریہ ادا کرنے کیلئے جارہے ہیں اور شہباز شریف، مریم نواز شریف اور حمزہ شہباز شریف کو بھی اس مقصد کیلئے ساتھ لے جارہے ہیں۔ معلوم ہوا ہے شاہد خاقان عباسی نے توانائی کے منصوبوں کی تکمیل اور پایہ تکمیل پہنچنے والے منصوبوں پر نواز شریف کو مبارکباد دی اور کہا انکے مثبت اثرات ہوں گے جبکہ سی پیک گیم چینجر ثابت ہوگا۔

وزیراعظم/ ملاقات

مزیدخبریں