سپریم کورٹ نے غیرت کے نام پر قتل کیس کے 2 ملزمان کو12 سال بعد بری کردیا

18 اگست 2017 (12:36)

سپریم کورٹ نے غیرت کینام پر قتل کیس کے 2 ملزمان کو 12 سال بعد بری کر دیا۔جمعہ کوجسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے غیرت کے نام پر قتل کیس کی سماعت کی۔ دوران سماعت عدم شواہد کی بنا کر عدالت نے غیرت کے نام پر قتل کیس کے 2 ملزمان کو 12 سال بعد بری کردیا۔اعجاز احمد اور شاہد اقبال پر 2005 میں حافظ آباد میں ایک شخص کو قتل کرنے کا الزام تھا۔جسٹس آصف سعید کھوسہ نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ نظام کی بہتری کے اقدامات کا کوئی نتیجہ نہیں نکلا، خرابی یہ ہے کہ پولیس مدعی کے ساتھ مل جاتی ہے۔

نفس کا امتحان

جنسی طور پر ہراساں کرنے کے خلاف خواتین کی مہم ’می ٹو‘ کا آغاز اکتوبر دو ...