تھرپارکر: چکن گونیا وائرس میں خطرناک اضافہ‘ 2ہزار افراد متاثر

18 اگست 2017

تھرپارکر(آن لائن)تھرپارکر میں پھیلنے والا چکن گونیا کا وائرس بے قابو ہوگیا، مریضوں کی تعداد تیزی سے بڑھنے لگی، 15 روز میں یہ خطرناک وائرس دو ہزار مریضوں میں پھیل چکا ہے، سب سے زیادہ متاثر ہونیوالی تحصیل چھاچھرو ہے، ہسپتال میں ادویات کا فقدان ہے جبکہ محکمہ صحت تھرپارکر چکن گونیا کے وائرس پر قابو پانے میں مکمل طور نا کام ہوگیا۔تفصیلات کے مطابق تھرپارکر میں پھیلنے والا چکن گونیا کا وائرس چھاچھرو سمیت تھرپارکر کے 30 دیہات میں پھیل چکا ہے، 15 روز میں متاثرہ علاقوں سے آنے والے مریضوں کی تعداد دوہزار تک پہنچ گئی، اس خطرناک وائرس میں سب سے زیادہ متاثر چھاچھرو تحصیل کے گاؤں ہے۔ ہسپتال میں زیر علاج مریضوں کی تعداد بڑھنے سے سہولیات کا فقدان پیدا ہوگیا جس سے مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ ہسپتال میں بیڈ کم پڑنے سے مریضوں کو میزوں اور فرش پر لیٹایا گیا ہے،ہسپتال میں پینے کا صاف پانی تک فراہم نہیں کیا جا رہا ہے۔وائرس کے شکار مریضوں کی احتیاطی تدبیر کے حوالے سے بھی کوئی بندوبست ہے نہ آئسولیشن وارڈ، جبکہ مرض تیزی سے بڑھ رہا ہے۔

نفس کا امتحان

جنسی طور پر ہراساں کرنے کے خلاف خواتین کی مہم ’می ٹو‘ کا آغاز اکتوبر دو ...