دینی مدارس کے کردار پر کوئی دبائو‘ رکاوٹ قبول نہیں کی جائیگی: فضل الرحمن

18 اگست 2017

لاہور (خصوسی نامہ نگار) جمعیت علماء اسلام کے امیر مولانا فضل الرحمن نے کہاکہ وطن عزیز جس نظریئے کے بنیاد پر معرض وجود میں آیا‘ جے یو آئی اسی نظریئے کے تحفظ کے لیے مصروف عمل ہے ، لاہور پہنچنے پرمولانا محمد امجد خان ،حافظ ریاض درانی ،حاجی منظور آفریدی، طارق خان بلوچ،بلال احمد میر سمیت دیگر پارٹی رہنمائوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں کہاکہ ملک اس وقت نازک صورتحال سے دوچار ہے اور ہم مشکل وقت سے گزر رہے ہیں اس وقت میں ہمارے نزدیک اتفاق واتحاد کی اشد ضرورت ہے۔ ملک اس وقت امن کی کاوشوں کو آگے بڑھانے کی ضرورت ہے ہماری کاوشیں یہ ہیں کہ وطن عزیز کے خلاف سازشیں نا کام ہوں بد امنی ختم ہو سکے۔ فضل الرحمن نے کہاکہ73ء کے آئین پر عملدرآمد وقت کی اہم ضرورت ہے ،سی پیک پروگرام تو خراب کر نے کی سازشیں ہورہی ہیں لیکن ایسی ہر سازش کا جے یو آئی اور عوام ڈٹ کر مقابلہ کریں گے انہوں نے کہا کہ ملک کو ترقی کی راہ پر لے جانے کے لیئے آئین پر عمل درآمد کی ضرورت ہے۔ دینی مدارس کے کردار کے راستے میں کوئی دبائو اور رکاوٹ قبول نہیں کی جا ئے گی جے یو آئی نے تمام مکاتب فکر کے متفقہ نکات کو حکومت کے سامنے رکھ دیا اس پر عمل در آمد حکومت کی ذمہ داری ہے دین کے لیئے کا م کر نے والوں کے راستے میں رکاوٹیں ڈالنے کی اب روش ختم جا نی چاہیے۔