شادی سے پہلے لڑکی اور لڑکے سے رائے لی جاتی ہے؟ گیلپ سروے

18 اگست 2017

اسلام آباد(نامہ نگار)گیلپ پاکستان کے سروے کے مطابق 21 فیصد پاکستانیو کا کہنا ہے کہ شادی سے پہلے لڑکے اور لڑکی سے ان کی رائے نہیں لی جاتی ۔گیلپ پاکستان کی برف سے جاری تازہ ترین سروے رپورٹ کے مطابق سروے کے دوران لوگوں سے سوال پوچھا گیا کہ ”آپ کے خیال میں شادی سے پہلے لڑکے اور لڑکی کو ان سے رائے پوچھنے کا حق دیا جاتا ہے“ تو 21 فیصد نے جواب میں کہا کہ شادی سے پہلے لڑکے اور لڑکی سے ان کی رائے نہیں لی جاتی ، 42 فیصدکے مطابق لڑکے اور لڑکی کے اس حقکا کسی حد تکخیال رکھا جاتا ہے جبکہ 36 فیصد کا خیال ہے کہ لڑکے اور لڑکی سے مکمل طور پر رائے لی جاتی ہے۔8 سال قبل 2009ءمیں بھی اسی سوال پر گیلپ پاکستان نے سروے کرایا تھا اس سروے میں بھی 21 فیصد کا کہنا تھا کہ لڑکے اور لڑکی سے ان کی رائے نہیں پوچھی جاتی 44 فیصد کا کہنا تھا کہ کسی حد تک رائے لی جاتی ہے۔34 فیصد کا کہنا تھا کہ مکمل رائے لی جاتی ہے جبکہ ایک فیصد نے کوئی جواب نہیں دیا۔