زچہ و بچہ کی صحت کی نگہداشت کے معیار کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے‘ سائرہ افضل

18 اگست 2017

اسلام آباد(خصوصی نمائندہ)وفاقی وزیر برائے نیشنل ہیلتھ سروسز سائرہ افضل تارڑ نے زچہ بچہ کی صحت کی نگہداشت کے معیار کو بہتر بنانے کی ضرورت پر زور دیا ہے ۔ انہوں نے جمعرات کو یہاں ” کوالٹی آف کیڑا رﺅنڈ دی ٹائم آف برتھ “ کے بارے صوبائی مشاورتی اجلاس کی صدارت کی جس کے دوران انہوں نے کہا کہ پائیدار ترقی کے اہداف کو مد نظر رکھتے ہوئے ماﺅں کی ان اموات کو روکنے کے لئے بڑیفعالیت سے کام لیتے ہوئے ان خواتین تک پہنچنا ہو گا جن کو صحت کے عملہ کی عدم دستیابی کی کمی کے باعث مسائل کا سامنا ہے ۔ انہوں نے صحت کے سماجی عزائم کا جائزہ لینے کی پر زور دیا اور کہا کہ پیدائش کے وقت ہونے والی طبی نگہداشت کے معیار کے مسئلہ کو حل کرنے کے لئے متعدد شراکت داروں کے ساتھ ملکر کام کیا جائے ۔ تھنک ٹینک نے وزیر اعظم کے نیشنل ہیلتھ پر وگرام بھی زور دیا جس سے مالیاتی رکاوٹوں پر قابو پانے میں مدد ملی ہے اور کہا کہ طبی نگہداشت کے معیار کو بہتر بنا کر کمیونٹی کے اعتماد کے حصول کی ضرورت ہے ۔اجلاس کے دوران ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ ڈاکٹر اسد حفیظ نے بتایا کہ معیارات اور سٹینڈرڈز کو ادارہ جاتی بنانا ہی نوزائیدہ بچوں اور ماﺅں کی زندگی بچانے کا واحد راستہ ہے ۔ واضح رہے کہ یہ ایک روزہ راﺅنڈ ٹیبل اجلاس تھا جس میں تمام صوبائی محکمہ ہائے صحت پرائیویٹ اور ترقیاتی شعبوں اور غیر سرکاری اداروں اور علمی اداروں کے نمائندوں نے شرکت کی۔

نفس کا امتحان

جنسی طور پر ہراساں کرنے کے خلاف خواتین کی مہم ’می ٹو‘ کا آغاز اکتوبر دو ...