فاٹا ایجنسیز کے پولیٹیکل ایجنٹس کا طرز افسری قابل افسوس ہے: سینیٹر ہلال الرحمن

18 اگست 2017

اسلام آباد(خبر نگار) سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے ریاستوں و سرحدی امور کے چیئرمین سینیٹر ہلال الرحمن نے کہا ہے کہ فاٹا کے پولیٹیکل ایجنٹس کا طرز افسری انتہائی قابل افسوس ہے۔ کسی بھی قبائلی ایجنسی میں پولیٹیکل ایجنٹ کا رویہ عوام کے ساتھ مناسب نہیں اور ایک بے تاج بادشاہ کے طور پر اختیارات کو استعمال کرتے ہوئے بے گناہ لوگوں کو چھوٹی چھوٹی باتوں پر جیلوں میں ڈالا جارہا ہے۔ انہوں نے تجویز دی کہ پولیٹیکل ایجنٹس کے اختیارات سے متعلق اصول اور قواعد وضع کیے جائیں تاکہ اختیارات کے ناجائز استعمال کو روکا جاسکے۔ کمیٹی نے فاٹا میں فلور ملز کی بندش کے معاملے کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے کہا کہ فاٹا کے ساتھ امتیازی سلوک کو کسی بھی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا۔ سینیٹر صالح شاہ نے کہا کہ گزشتہ کئی سالوں سے فلور ملز بند پڑی ہیں اور عوام کو مشکلات کا سامنا ہے۔ سینیٹر اورنگزیب خان نے کہا کہ فاٹا کی عوام کو بھوک سے مروانے کا منصوبہ بنایا گیا ہے۔ کمیٹی کے چیئرمین نے کہا کہ فاٹا کی سبسڈی کی ادائیگی تو مرکزی حکومت کی ذمہ داری ہے اور فاٹا کو اس سہولت سے محروم رکھنا فاٹا کی عوام کے ساتھ زیادتی کے مترادف ہے۔