خیرپور‘ سیال برادری کے8 افراد گاڑی موری کے3 چرواہے اغواء

18 اگست 2017

گمبٹ / خیرپور(نامہ نگاران) گمبٹ کے قریب سیال برادری کے 8افراد10روز سے پرسرار طور پر لاپتہ ۔ورثاء نے اغواء کا شک ظاہر کردیا ۔10روز قبل سیال برادری کے8افراد حیدرآباد شادی کی تقریب میں جارہے تھے کہ لاپتہ ہوگئے ،پولیس مقدمہ درج نہیں کررہی ہے ،ورثاء ۔ گمبٹ کے کچے کے علاقے کیٹی فتو سیال کے رہائشی نوجوان شوکت علی سیال کے اہل خانہ 8افراد سمیت گزشتہ 10سے پرسر ار طور پر لاپتہ ہوگیا ہے ،اس سلسلے میں بتایا گیا ہے کہ لاپتہ ہونے والے 8افراد کو مبینہ طور پر اغواء کیا گیا ہے مبینہ طور پر اغواء ہونے والے افراد کے ورثاء شوکت علی سیال اور دیگر نے اگڑا پریس کلب پہنچ کر احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ 10روز قبل ہمارے خاندان کے 8افراد گلبہار سیال ،کوثر سیال،دلبر سیال،رحمت خاتون،ستار ہ سیال،شبانہ سیال،شہناز سیال اور غلام علی سیال حیدر آباد میں شادی کی تقریب میں جانے کے لئے نکلے تھے ،جو شادی کی تقریب میں پہنچنے کے بجائے راستے میں سے مبینہ طور پر لاپتہ ہوگئے ہیں جن کی ہر جگہ معلومات کی مگر کہیں پتہ نہیں چل رہا ہے۔ ایس ایچ او کے مطابق معلوم ہوا ہے کہ سیال برادری کے8افراد پسند کی شادی کرکے آنے والی لڑکی کے ورثاء کے پاس کراچی میں یرغمال بنے ہوئے ہیں ۔ دریں اثناء خیرپور کے گاڑی موری کے قریب کچے کے گائوں غلام علی اوتیرومیں دریائے سندھ کے نزدیک بیٹھے اوتیرا برادری کے افراد پر 15سے زائد مسلح افراد نے حملہ کرکے اوتیرا برادری کے افراد کو یرغمال بنانے کے بعد 3چراہوں یوسف،الیاس اور بشیر اوتیرو کو مبینہ طور پر اغواء کرکے لاکھوں روپے سے زائد مالیت کی 60سے زائد بھینسیں بھی اغواء کرکے اپنے ساتھ لے گئے ،جبکہ واقع کی اطلاع ملنے پر پولیس اور دیہاتی گائوں میں پہنچتے تو پولیس اورمسلح افرادکے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا ،جس میں مسلح افراد فائرنگ کرتے ہوئے فرار ہونے میں کا میاب ہوگئے ،واقع کے خلاف اوتیرا برادری کے سینکڑوں افراد نے ٹھڑی قومی شاہراہ پر پولیس کے خلاف دھرنا دیا ،دھرنا دینے کے نتیجے میں پنجاب اور کراچی جانے والی گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئی ۔
چرواہے اغواء