عام انتخابات 2018ءمیں ہوتے نظر نہیں آرہے‘ شجاعت

18 اگست 2017

کراچی (عمیرعلی انجم) پاکستان مسلم لیگ (ق) کے سربراہ اور سابق وزیراعظم چوہدری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ موجودہ صورتحال میں آئندہ عام انتخابات 2018ءمیں ہوتے ہوئے نظر نہیں آرہے ہیں نوازشریف ملک کو تباہی کے دہانے پر لے گئے ہیں ملک کو ان مسائل سے نجات دلانے کےلئے مشترکہ جدوجہد کرنا ہو گی ملک کی سیاست میں ایم کیو ایم اور الطاف حسین کا کوئی مستقبل نہیں ہے کراچی میں ایم کیو ایم کے زوال کے بعد سیاسی خلا پیدا ہوگیا ہے مسلم لیگی گروپوں کو متحد کراچی کے لوگوں کو ایک نئی قیادت فراہم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ملک میں نیشنل ڈائیلاگ ہونا چاہئے یہ ڈائیلاگ 2018ءسے پہلے اور بعد میں بھی ہو سکتا ہے ان خیالات کا اظہار انہوںنے جمعرات کو روزنامہ نوائے وقت سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ ایک سوال کے جواب میں چوہدری شجاعت حسین نے کہا کہ ملک میں نیشنل ڈائیلاگ ہونا چاہئے یہ ڈائیلاگ 2018ءسے پہلے اور بعد میں بھی ہو سکتا ہے۔ قبل ازیں مسلم لیگ یوتھ ونگ کی جانب سے مقامی لان میں منعقدہ ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری شجاعت نے کہاکہ نوازشریف کہتے پھر رہے ہیں مجھے کیوں نکالا گیا میرا کیا قصور ہے ان کا سب سے بڑا قصور یہ ہے کہ انہوں نے اپنی چوری کو بچانے کےلئے اپنی بیٹی مریم نواز کو بھی ملوث کر دیا جو کہ میری بیٹی جیسی ہے اس کے ساتھ انہوں نے ظلم کیا ہے اب ان کے سارے قصور نیب ریفرنس میں ظاہر ہو جائیں گے انہیں چور تو 1990ءسے کہا جا رہا ہے۔ ا