بلوچستان ترجیحات میں سرفہرست،، جلد دورہ کرکے ترقیاتی منصوبوں کا جائزہ لوں گا : وزیراعظم

18 اگست 2017

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے بلوچستان کے وزیراعلیٰ سردار ثناءاﷲ خان زہری‘ بہاولپور سے تعلق رکھنے والے ارکان قومی اسمبلی کے وفد نے الگ الگ ملاقاتیں کیں۔ وزیراعظم اور وزیراعلیٰ بلوچستان کے درمیان ملاقات میں سیاسی صورتحال اور دیگر امور پر بات چیت کی گئی۔ وزیراعظم نے کہا کہ وہ جلد بلوچستان کا دورہ کرینگے۔ جن میں ترقیاتی منصوبوں کی پیشرفت کا جائزہ لیا جائے گا۔ وزیراعظم نے کہاکہ بلوچستان ملک کا سب سے بڑا صوبہ ہے اور حکومت کی ترجیحات میں سرفہرست ہے۔ اس کی دلیل سی پیک‘ گوادر کی بندر گاہ اور سڑکوں کا نیٹ ورک اور سماجی و معاشی سکیمیں ہیں۔ حکومت امن و امان پر توجہ مرکز کئے ہوئے ہے۔ بلوچستان کو ملک کی دوسری اکائیوں کے مساوی لانے کے لئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔ وزیراعلیٰ بلوچستان نے وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالنے پر ان کو مبارکباد دی۔ بہاولپور سے تعلق رکھنے والے ارکان قومی اسمبلی نے بھی وزیراعظم سے ملاقات کی۔ ارکان نے اپنے حلقوں کی ترقیاتی سکیموں کے بارے میں بتایا۔ وزیراعظم نے کہا کہ حکومت جنوبی پنجاب کی ترقی پر توجہ مرکوز کئے ہوئے ہے۔ وزیراعظم نے ہدایت کی ارکان کے حلقوں میں گیس اور بجلی کی سکیموں کے لئے فنڈز فوری جاری کئے جائیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ ارکان مسائل کے حل کیلئے ان سے کسی بھی وقت رابطہ قائم کر سکتے ہیں۔ وفد میں بین الصوبائی رابطہ کے وفاقی وزیر ریاض پیرزادہ‘ وزیر صنعت ارشد خان لغاری‘ مخدوم سید علی حسن گیلانی‘ سید محمد اصغر‘ میاں امتیاز اور دیگر ارکان شامل تھے۔ پاکستان میں امریکہ کے سفیر ڈیوڈہیل نے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے ملاقات کی ۔ جس میں دوطرفہ تعلقات پر بات چیت کی گئی۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان امریکہ کو اہم پارٹنر سمجھتا ہے اور موجودہ تعلقات کو مزید مستحکم بنانا چاہتا ہے۔ امریکی سفیر نے وزیراعظم کو منصب سنبھالنے کی مبارکباد دی اور دوطرفہ تعاون میں اضافہ کی خواہش کا بھی اظہار کیا۔