مسلم لیگ ن کا ایم کیو ایم پاکستان کو وفاقی کابینہ میں شامل کرنے کا عندیہ

18 اگست 2017

کراچی (رپورٹ: عمیر علی انجم) حکمران مسلم لیگ(ن)نے ایم کیوایم کوگرین سگنل دینے کا عندیہ دیاہے۔ذرائع نے دعوی کیاہے کہ ایم کیوایم اورحکمران مسلم لیگ کی قیادت کے درمیان ورکنگ ریلیشن شپ میں تیزی آئی ہے جبکہ دونوںجماعتوںکے رہنمائوںکی جلداسلام آبادمیں ایک ملاقات بھی متوقع ہے جس میںلیگی قیادت متحدہ کوموجودہ حکومت کاحصہ بنانے کی پیشکش کرسکتی ہے تاہم اس حوالے سے حتمی فیصلہ رابطہ کمیٹی کی مشاورت سے کیاجائے گامتحدہ کی فی الحال مکمل توجہ آئندہ عام انتخابات پرمرکوزہے ایم کیوایم کے ذرائع کے مطابق متحدہ جلدبھرپوراندازمیں اپنی سیاسی سرگرمیوںکاآغازکرنے جارہی ہے اورملک میں ہونے والے آئندہ انتخابات کی تیاریوںکابھی آغازکرے گی اس حوالے سے پارٹی قیادت میں مشاورت کاسلسلہ جاری ہے متحدہ پہلے مرحلے میں بڑے پیمانے پرسیاسی جلسوںکاانعقادکرے گی جبکہ عوامی رابطہ مہم کے علاوہ متحدہ کاشعبہ خواتین اورایلڈرونگ گھرگھرعوامی رابطہ مہم چلائے گاجس میں ایم کیوایم سندھ کی حکمران جماعت پیپلزپارٹی کی صوبے میں ناقص کاکردگی کے حوالے سے عوام کوآگاہ کرے گی ذرائع نے بتایاکہ ایم کیوایم کی مرکزی قیادت اس حوالے سے بھی مشاورت کررہی ہے کہ آئندہ عام انتخابات میں نوجوان اورخواتین کوزیادہ سے زیادہ پارٹی ٹکٹ دیئے جائیں گے ۔تاکہ ملک میں نئی قیادت سامنے آسکے ذرائع نے بتایاکہ ایم کیوایم فی الحال کسی بھی قسم کے احتجاج سے گریزکرتے ہوئے پارٹی کے تنظیمی ڈھانچے پرمشاورت کررہی ہے جس کے بعدبتدریج عوامی رابطہ مہم اورانتخابی تیاریوںکاآغازکیاجائے گا۔
ایم کیو ایم سگنل