نوازشریف ہی مسلم لیگ کے قائد مرکزی مجلس عاملہ نے قرارداد منظور کر دی

18 اگست 2017

اسلام آباد (وقائع نگار خصوصی) پاکستان مسلم لیگ (ن) کی مرکزی مجلس عاملہ نے سابق وزیر اعظم و صدر محمد نواز شریف کو پارٹی قائد حیثیت دے دی ہے میاں نواز شریف بدستور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد رہیں گے، ان کی قیادت میں پاکستان میں جمہوریت کے استحکام اور عوام کے حق حکمرانی کی تحریک جاری رکھی جائے گی مرکزی مجلس عاملہ نے عوامی اعتماد کو بے توقیر کرنے کے غیر آئینی و غیر قانونی سلسلہ ختم کرنے کیلئے پارٹی قائد محمد نواز شریف کے ہر اقدام کا ڈٹ کر مکمل ساتھ دینے کا اعلان کر دیا اس بات کا فیصلہ جمعرات کو پاکستان مسلم لیگ (ن) کی مرکزی مجلس عاملہ کے اجلاس میں منظور قراردادوں میں کیا گیا ہے جو چیئرمین سینیٹر راجہ ظفر الحق کی صدارت میں متفقہ طور پر منظور کی گئیں قومی معاملات سیاسی صورتحال خارجہ امور، پڑوسی ممالک کے ساتھ تعلقات سے متعلق 3الگ الگ قرار دادیں متفقہ طور پر منظور کی گئیں۔ پہلی قرار داد میں کہا گیا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی مرکزی مجلس عاملہ کا یہ اجلاس اپنے قائد محمد نواز شریف کے قائدانہ کردار کو خراج تحسین پیش کرتا ہے، صدر جماعت کے طور پر مسلم لیگ (ن) کو وفاق پاکستان کی مقبول ترین جماعت بنانے کیلئے ان کی جدوجہد، پاکستان کی سیاسی اور جماعتی تاریخ کا سنہری باب ہے۔ انہوں نے آئین کی فرماں روائی، قانون کی سربلندی اور جمہوریت کے استحکام کیلئے تاریخ ساز کردار ادا کیا۔ انہوں نے ’’اقتدار کی بجائے اقدار‘‘ کے اصول کی پاسداری کرتے ہوئے مفاہمت، ہم آہنگی اور یکجہتی کے کلچر کو فروغ دیا، ملک کو اندھیروں سے نکالنے، انفراسٹرکچر کی تعمیر، دہشت گردی کے خاتمے، جدید معیشت کی تعمیر، پاکستان کو اعلانیہ ایٹمی قوت بنانے، دفاع وطن کو مضبوط سے مضبوط تر کرنے، چین پاکستان اقتصادی شاہراہ جیسا تاریخ ساز منصوبہ جاری کرنے، اقتصادی تعاون اور امن کو فروغ دینے کیلئے روس سمیت متعدد ممالک کے ساتھ تعاون بڑھانے اور پاکستان کو شنگھائی تنظیم برائے تعاون کا رکن بنانے کیلئے ان کا کردار پوری قوم کیلئے باعث فخر ہے۔ اجلاس اس یقین کا اظہار کرتا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کو بدستور ان کی قائدانہ سرپرستی کا اعزاز حاصل رہے گا۔