بلدیہ عظمی کی آمدنی میں 3 ارب 28 کروڑ کم موصول ہوئے

18 اگست 2017

کراچی( اسٹاف رپورٹر) دونوں اداروںکے درمیان مختلف علاقوں پرکنٹرول کی جنگ میں شدت پیداہوگئی۔ کے ڈی اے اور کے ایم سی کے درمیان کراچی کے مختلف علاقوں پرکنٹرول کی جنگ میں شدت پیدا ہوگئی۔ کے ا یم سی کے ذرائع نے کے ڈی اے پر پارکوں اور چارجڈ پارکنگ سائٹس پر قبضہ کا الزام لگایا ہے اور کہا ہے کہ کے ڈی اے کی جانب سے ریونیو پیداکرنے والے اداروں پر قبضہ کے بعد سے کے ایم سی کی آمدنی بہت گھٹ گئی ہے اور گزشتہ سال کے ایم سی کی آمدنی میں 3 ارب 28 کروڑ کم موصول ہوئے۔ صدر پارکنگ پلازہ پر بھی کے ڈی اے نے قبضہ کرلیا‘ جسکے بعد پارکنگ فیس بند ہوگئی۔ کے ڈی اے آرڈر کے تحت کے ڈی اے چارجڈ پارکنگ فیس وصول نہیں کرسکتی‘ لیکن اس کے باوجود کے ڈی اے نے کے ایم سی کی چار جڈ پارکنگ سائٹس پرقبضہ کرلیا اور غیر قانونی طورپر وصولی جاری ہے ۔ قانون کے مطابق چارجڈ پارکنگ صرف کے ایم سی اور ڈی ایم سی وصول کرسکتی ہیں‘ لیکن اب ہر ادارہ چارجڈپارکنگ وصول کررہا ہے۔