بلوچستان کا بیس ارب روپے خسارے کا بجٹ آج پیش کیا جائے گا

17 جون 2015 (16:25)
بلوچستان کا بیس ارب روپے خسارے کا بجٹ آج پیش کیا جائے گا

بلوچستان اسمبلی کا بجٹ اجلاس آج سہ پہر ساڑھے چار بجے طلب کیا گیا ہے۔ 225 ارب روپے سے زائد کا بجٹ مشیر خزانہ میر خالد لانگو پیش کریں گے۔ بجٹ میں ایک سو اسی ارب روپے غیر ترقیاتی اخراجات کے لیے رکھنے کی تجویز ہے جبکہ ترقیاتی بجٹ کا حجم پچپن ارب روپے ہو گا۔ تنخواہوں میں ساڑھے سات فیصد اضافے کی تجویز ہے۔ بجٹ میں امن و امان، تعلیم، صحت، لائیواسٹاک اور زراعت کے شعبوں کو ترجیح دی جائے گی۔ حکومت بلوچستان نے نئے ہیلی کاپٹرکی خریداری کیلئے بھی پونے دو ارب روپے مختص کیے ہیں۔ بجٹ اجلاس سے قبل وزیر اعلیٰ بلوچستان کی زیر صدارت کابینہ اجلاس میں بجٹ تجاویز کی منظوری دی جائے گی۔ بلوچستان کے بجٹ اجلاس کی تاریخ دو بار تبدیل ہوئی ہے، پہلے بجٹ اجلاس سولہ جون کو شیڈول تھا جسے بعد میں تبدیل کر کے اٹھارہ جون کو بلایا گیا، لیکن اٹھارہ جون کو متوقع طور پر ماہ صیام کے آغاز کے باعث اجلاس آج طلب کیا گیا ہے، وفاق، باقی تینوں صوبے اور آزاد کشمیر کے بجٹ پیش کیے جا چکے ہیں۔